"پیٹو" اسرائیلی فوجیوں کے لئے تین ملین کے کھابے

فوج کو دیے گئے اسلحہ کا 60 فیصد استعمال کیا گیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

اس سے قبل اسرائیلی فوج فلسطینیوں کے وحشیانہ قتل عام میں بدنام زمانہ شہرت تو رکھتی تھی مگر اب پتا چلا ہے کہ صہیونی فوج محاذ جنگ میں تابڑ توڑ حملوں کے ساتھ کھانے پینے کے میدان میں بھی کسی سے پیچھے نہیں ہے۔

"پیٹو" اسرائیلی فوجیوں کے ذق بسیار خوری کے بارے میں خود اسرائیلی میڈیا نے بھی چونکا دینے والے انکشافات کیے ہیں اور بتایا ہے کہ غزہ کی پٹی پر جاری حملوں میں 9000 فوجی 30 لاکھ کھابے اڑا دیے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق اسرائیلی فوج کی بسیارخوری کے بارے میں یہ تازہ معلومات اسرائیلی فوج کے محکمہ لاجسٹک کے ادارے "آتال" نے جاری کیے ہیں۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ غزہ کی پٹی کے خلاف جنگ میں نو ہزار اسرائیلی فوجیوں نے ایک ماہ تک براہ راست جنگ میں حصہ لیا اور مسلسل زمینی، بحری اور فضائی حملوں میں 2000 فلسطینیوں کو شہید کیا گیا۔

رپورٹ میں غزہ جنگ میں فوجیوں کو فراہم کردہ خوراک کے علاوہ جنگی آلات کی تفصیلات بھی درج کی گئی ہیں اور بتایا گیا ہے کہ فوجیوں کو 48 لاکھ بندوق کی گولیاں،34 ہزار بم اور 39 یزار توپوں اور ٹینکوں کے گولے دیے گئے تھے۔ جن میں سے فوجیوں نے 60 فیصد استعمال کیا جبکہ 40 فیصد کو اسلحہ ڈپوؤں میں جمع کرا دیا گیا ہے۔ جنگ کے دوران اسرائیل کی بری فوج نے گیارہ ملین لیٹر ڈیزل اور فضائیہ نے 50 ملین لیٹر ایندھن استعمال کیا۔

اسرائیل کے عبرانی اخبار "یدیعوت احرونوت" نے اپنے انگریزی ایڈیشن میں اسرائیلی فوج کو فراہم کردہ خوراک، اس کی اقسام اور مقدار کے بارے میں بھی مفصل اعداد و شمار جاری کیے ہیں۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطالعے سے گذرنے والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جنگ میں شریک فوجیوں کو 07 لاکھ 70 ہزار پانی کی بوتلیں، پانچ لاکھ 80 ہزار ریڈی میڈ خوراک کے پیکٹ، 06 لاکھ تازہ کھانے کے پیکٹ، سفری ضرورت کے پیش نظر 09 لاکھ 50 ہزار فوڈ پیکٹ اور ناشتے کے لیے ایک لاکھ سینڈویچ دیے گئے۔ انڈے، دودھ، مربہ جات، کافی، چائے، جوس، روٹی اور مکھن اس کے علاوہ ہیں۔

جنگ میں استعمال کے لیے نو ہزار فوجیوں کو 1474 نوعیت کے ہتھیار اور 3214 قسم کے دیگر خصوصی الات فراہم کیے گئے، جن میں تاریکی میں دیکھنے کی صلاحیت کے حامل چشمے، گردو غبار سے آنکھوں کی حفاظت کے لیے 23 ہزار عینکیں، 35 ہزار بستر اور تکیے اور چار ہزار میٹر خاردار تار بھی مہیا کی گئی تھی۔ فوجیوں نے اپنی نقل وحرکت کے لیے 1073 بسیں اور 1147 ٹیکسی کاریں بھی استعمال کیں۔ غزہ کے محاذ جنگ پر فوج کے یومیہ اخراجات 15 ملین شیکل سے زیادہ رہے۔ ایک ماہ میں یہ رقم 450 ملین شیکل سے تجاوز کر گئی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں