.

مسکراتے اونٹ نے مصری نوجوانوں کو 'ہیرو' بنا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصری نوجوان حسام انتیکا کو اندازہ نہیں تھا کہ وہ اونٹ کے ساتھ تصویر بنا کر سوشل میڈیا پر ہیرو بن جائے گا۔ انہوں نے اپنے دوستوں کرم عبدالعزیز اور میسارا صلاح کے ساتھ کچھ اس طرح 'سیلفی' بنائے کہ پس منظر میں ایک ایک 'مسکراتا' اونٹ بھی سیلفی فریم میں نمایاں نظر آیا۔ سوشل میڈیا پر یہ منفرد تصویر بہت زیادہ مقبول ہوئی۔

حسام نے کارٹر نیوز ایجنسی کو تصویر کے تخیل کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ انہوں نے اونٹ کو چارا کھلایا اور پھر اس سے کچھ دیر کھیلتے رہے، بعد میں انہیں اپنے دو دوستوں اور ایک نئے دوست کے ہمراہ سیلفی بنانے کا شوق چرایا، انہیں اندازہ نہیں تھا کہ سیلفی کے پس منظر مین کھڑا دوست مسکرا رہا تھا۔

تصویر بننے کے بعد ان کی حیرت کی انتہا نہ رہی کہ منفرد 'سیلفی' میں دو دوستوں کے ہمراہ ان کا تیسرا دوست اونٹ بھی مسکرا رہا تھا۔ اس تصویر کو حسام نے رات کو سوشل میڈیا پر فیس بک کے ذریعے پوسٹ کیا، تاہم صبح بیدار ہونے پر اس کی حیرت کی انتہا نہ رہی کہ ان کی 'منفرد سیلفی' جنگل میں آگ کی طرح پھیل کر مقبولیت کے ریکارڈ قائم کر چکی ہے۔

اس تصویر پر کئے جانے والے تبصروں میں ایک تبصرہ نگار نے اپنے پرلطف تبصرے میں کہا کہ ٹھیک ہے ایک عام سے نوجوان سے اونٹ کے ساتھ تصویر بنوا کر فیس بک پر مشہوری حاصل کر لی تاہم یہ بات اپنی جگہ محل نظر ہے کہ اونٹ عمومی طور پر مسکراتا نہیں، میرا گمان ہے کہ سیلفی کے شوقین نوجوانوں نے یقیناً اونٹ کو کچھ ایسی چیز کھلائی کہ جس سے اس کے صحرائی جہاز کے چہرے پر 'مسکراہٹ' بکھری۔