.

عرب ممالک کے 45 ارب پتی 223 ارب ڈالر کے مالک!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی بزنس جریدے’’فوربز‘‘ نے سال 2015ء کے ارب پتی صاحب ثروت کی ایک نئی فہرست جاری کی ہے جس میں گیارہ ممالک کے ایسے 45 امراء بھی شامل ہیں جو عرب پس منظر کے ساتھ امریکا اور مغربی شہریت بھی رکھتے ہیں۔

فوربز کی تازہ فہرست ’’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘‘ کے مطالعے سے گذری۔ رواں سال کے کل 1826 ارب پتیوں میں سعودی عرب کے 10 ارب پتی بھی شامل ہیں جن کی مجموعی دولت 48 ارب ڈالر سے زیادہ ہے۔ دو ہزار کے لگ بھگ ارب پتی شخصیات مجموعی طور پر سات کھرب 50 ارب ڈالر کے مالک ہیں۔ ارب پتی عالمی شخصیات میں سب سے کم عمر ایک امریکی 24 سالہ ایفن اشپیگل بھی شامل ہے جو ایک ارب 500 ملین ڈالر کا مالک ہے۔ اشپیگل لبنانی نژاد کارلوس سلیم کے 77 ارب ڈالر کے مالک کے مقابلے میں ’غریب‘ سمجھا جاتا ہے۔

'فوربز' نے عرب ممالک کے ارب پتی امراء کی فہرست جاری کی ہے جن میں گیارہ عرب ملکوں کے 45 افراد شامل ہیں۔ ان میں سے بیشتر دہری شہریت رکھتے ہیں اور ان کی دولت عرب ملکوں کے علاوہ مغرب میں بھی پڑی ہے۔ عرب ملکوں کے ارب پتیوں میں 10 سعودی دولت مند صرف سات خاندانوں کے چشم و چراغ ہیں۔

لبنان کے نو ارب پتی پانچ خاندانوں کی اولاد ہیں جن میں سے ایک میکسیکو اور ایک برازیل میں مقیم ہے۔ فہرست میں مصر کے آٹھ دولت مند صرف تین خاندانوں سے تعلق رکھتے ہیں۔ ان میں سے ایک برطانیہ میں مقیم ہے۔ کویت کے پانچ دولت مند ایک ہی’’فیملی‘‘ کے افراد ہیں جبکہ متحدہ عرب امارات کے دو خاندانوں کے چار امراء بھی فہرست میں شامل ہیں۔

عرب دولت مندوں میں مراکش کے تین، شام کے دو افراد بھی شامل ہیں جن میں سے ایک فرانس اور دوسرا برطانیہ کی شہریت رکھتا ہے۔ الجزائر، عمان، سوڈان اور اردن کے ایک ایک ارب پتی بھی اس فہرست کا حصہ ہیں اور ان سب کی کل دولت 223 ارب 200 ملین ڈالر ہے۔

ایک ارب 50 کروڑ ڈالر کے 10 مالک

عرب ممال کے امراء میں سر فہرست 10 امراء مجموعی طورپر ایک کی کل دولت 150 ارب ڈالر ہے جو کہ عرب ملکوں کی مجموعی دولت 158 ارب 300 ملین ڈالر کے نصف کے قریب جا پہنچتی ہے۔ عرب امراء میں حسب معمول لبنانی کارلوس سلیم حلو سر فہرست ہے۔ دوسرے نمبر پر امریکی ارب پتی ’’بل گیٹس‘‘ کا نمبر آتا ہے۔

کارلوس سلیم حلو لبنا اور میکسیکو کی شہریت رکھتا ہے۔ 75 سالہ کارلوس عرب ممالک کے امراء میں پہلے اور عالمی دولت مندوں میں دوسرے نمبر پرہے۔ اس کی کل دولت 77 اعشاریہ ایک ارب ڈالر ہے۔ عرب ممالک کے امراء میں دوسرے 59 سالہ سعودی ولید بن طلال ہیں جو 22 ارب 60 کروڑ ڈالر کی دولت کے ساتھ عالمی دولت مندوں میں 34 ویں نمبر پر ہیں۔

لبنانی نژاد 76 سالہ جوزف صفرا برازیل کی شہریت رکھتے ہیں۔ عرب ممالک کے امراء میں ان کا نمبر تیسر اورعالمی سطح پر وہ 52 ویں امیر ترین آدمی ہیں۔ ان کی مجموعی دولت 17 ارب 30 کروڑ ڈالر ہے۔ ان کے ایک بھائی مویزیس جو اتنی دولت کے مالک تھے پچھلے سال جہان فانی سے رخصت ہوگئے۔ ان کی دولت اب ان کے بچوں میں منقسم ہوگئی ہے۔

محمد حسین العمودی سعودی عرب کے ارب پتی ہیں۔ 68 سالہ العمودی کی کل دولت 10 ارب 80 کروڑ ڈالر ہے جس نے انہیں عرب ممالک کا چوتھا اور پوری دنیا کا 116 امیر ترین شخص قرار دلوایا ہے۔

عرب ممالک کے امراء میں متحدہ عرب امارات کے عبداللہ بن احمد الغریر کو بھی شامل کیا ہے۔ 6.4 ارب ڈالر دولت کے ساتھ وہ عرب ممالک کے پانچویں امیر آدمی ہیں تاہم فوربز میگزین نے ان کی عمر اور امراء میں عالمی نمبر نہیں بتایا۔

چون سالہ نصیف ساویرس ایک مصری ارب پتی ہیں۔ عرب ممالک میں وہ چھٹے اور پوری دنیا میں 225 ویں دولت مند ہیں۔ ان کی مجموعی دولت 6.3 ارب ڈالر ہے۔

متحدہ عرب امارات کے ماجد الفطیم 6.2 ارب ڈالر دولت کے ساتھ عرب ممالک کے ساتویں اور دنیا بھرکے 230 ویں دولت مند ہیں۔
عرب ممالک کے ارب پتیوں میں سعودی عرب کے شہزادہ سلطان بن محمد بن سعود الکبیر آل سعود عرب ممالک کے آٹھویں دولت مند ہیں۔ 61 سالہ شہزادہ سلطان کی کل دولت 4.1 ارب ڈالر ہے اور عالمی امراء میں ان کا 405 واں نمبرہے۔

مصر کے محمد منصور کی کل دولت چار ارب ڈالر ہے۔ اپنی دولت کے اعتبار سے وہ عرب ممالک کے نویں اور پوری دنیا کے 418 امیر آدمی ہیں۔

عرب ملکوں کے 10 امراء میں محمد ابراہیم العیسیٰ بھی سعودی شہری ہیں۔ 90 سالہ العیسیٰ کی کل دولت 3.5 ارب ڈالر ہے۔ عرب ممالک میں ان کا دسواں اور پوری دنیا میں 497 واں نمبر ہے۔

عرب ممالک کے دیگر امراء

فوربز میگزین کی رپورٹ کے مطابق عرب ممالک کے 11 سے 20 تک دوسرے درجے کے امراء کی مجموعی دولت 39 ارب 700 ملین ڈالر ہے۔ متحدہ عرب امارات کے سیف الغریر عرب دنیا کے گیارہویں امیر ترین ہیں۔ ان کی کل دولت 3.4 ارب ڈلر جبکہ عالمی سطح پر وہ 514 نمبر پرہیں۔

لبنان کے سابق وزیراعظم 59 سالہ نجیب میقاتی عرب دنیا کے بارہویں امیر ترین ہیں اور ان کی کل دولت 3.3 ارب ڈالر ہے۔ دنیا بھرکے امراء میں ان کا نمبر534 واں ہے۔ نجیب میقاتی کے بھائی طہ میقاتی کی عمر70 سال ہے۔ ان کی مجموعی دولت بھی 3.3 ارب ڈالر ہے۔ وہ بھی عرب ممالک کے بارہویں امیر ترین آدمی ہیں۔

متحدہ عرب امارات کے عبداللہ الفطیم 13 امیر ترین شہری ہیں جن کی مجموعی دولت 3.2 ارب ڈالر ہے۔ عالمی امراء کی فہرست میں ان کا 557 واں نمبر ہے۔ الجزائر کے اسعد ربراب کی عمر71 سال، دولت 3.1 ارب ڈالر، عرب دنیا میں ان کا نمبر14 واں اور عالمی نمبر577 ہے۔

نجیب ساویرس 60 سالہ مصری شہری ہیں۔ دولت کے اعتبار سے وہ بھی الجزائری اسعد ربراب کے برابر ہیں۔ مصر کے یوسف منصور عرب ممالک کے 15 ویں امیر ترین آدمی ہیں جن کی کل دولت 2.9 ارب ڈالر ہے۔ فوربز کے مطابق ان کا عالمی نمبر628 ہے۔ سعودی شہری صالح عبداللہ کامل کی عمر73 سال، دولت 2.8 ارب ڈلر، عرب ممالک میں 16 واں اور پوری دنیا کے امراء میں 663 واں نمبر ہے۔

مصر کے یاسین منصور بھی اس فہرست میں شامل ہیں۔ ان کی کل دولت 2.3 ارب ڈالر ہے۔ وہ عرب ممالک کے 17 ویں اور پوری دنیا کے 810 ویں امیر ترین شہری ہیں۔ دولت کے اعتبار سے انہی کے ہم پلہ 48 سالہ بہاء الحریری اور مراکش کے عثمان بن جلو بھی شامل ہیں اور ان کی دولت بھی 2.3 ارب ڈالر ہے۔

سعودی نژاد سلیمان بن عبدالعزیز الراجحی اب 86 برس کے ہیں۔ ان کی دولت 2.1 ارب ڈلر ہے۔عرب ممالک میں ان کا 18 واں اور پوری دنیا کے امراء میں 894 واں نمبر ہے۔

اسی فہرست میں عرب ممالک کے امراء میں انیسواں نمبر مصر کے محمد الفائد کا ہے۔ دہری شہریت کے حامل الفائد کی مجموعی دولت دو ارب ڈالر ہے۔ اپنی دولت کے اعتبار سے وہ عرب ممالک کے 19 ویں اور پوری دنیا کے 949 ویں امیر ترین آدمی ہیں۔

مصر کے 85 سالہ انسی ساویریس اور سعودی عرب کے عدباللہ الراجحی کی الگ الگ دولت 1.8 ارب ڈالر ہے اور عرب ممالک کی 20 ویں امیر ترین شخصیات قرار دی گئی ہیں۔ عالمی امراء کی فہرست میں ان کا نمبر 1054 ہے۔

شامی بدو عرب ممالک کا ’غریب ارب پتی‘

فوربز جریدے کی رپورٹ کے مطابق عرب ممالک کے 21 سے 27 تک امیرترین افراد کی فہرست بھی جاری کی گئی ہے۔ ان کا تعلق مجموعی طورپر نو عرب ملکوں سے ہے۔ ان امراء کی مجموعی تعداد 20 ہے اور وہ 25 ارب 200 ملین ڈالر دولت کے مالک ہیں۔
عرب امراء میں 21 واں نمبر مراکش کے 74 سالہ عزیز اخنوش کا ہے۔ اخنوش سابق وزیر بھی ہیں۔ ان کی مجموعی دولت 1.7 ارب ڈالر ہے۔ عالمی امراء میں وہ 1118 ویں امیر ترین آدمی ہیں۔

عرب ممالک کے امراء میں 22 ویں نمبر پر لبنان کے سابق وزیراعظم سعد حریری کانام آتا ہے جو 1.5 ارب ڈالر دولت کے ساتھ دنیا کے 1250 ویں امیر آدمی ہیں۔ لبنان ہی کے روبیر معوض کی دولت بھی سعد حریری کی دولت کے برابر ہے۔

سعودی عرب کے 49 سالہ فواز الحکیر، ان کے بھائی 48 سالہ سلمان الحکیر، عبدالمجید الحکیر کی الگ الگ دولت 1.4 ارب ڈالر ہے۔ وہ عرب ممالک کے 23 ویں اور دنیا بھر کے 1324 ویں امیر ہیں۔

عرب ممالک کے امراء میں 86 سالہ مراکشی مولود شعبی، کویت کے فوزی الخرافی ، مہند الخرافی اور جاسم الخرافی کی الگ الگ دولت 1.3 تین ارب ڈالر ہے۔ وہ عرب ممالک کے 24 ویں اور پوری دنیا کے 1415 ویں امراء ہیں۔

عمان کے 63 سالی محم البروانی اور شام کے ایمن اصفری 1.2 ارب ڈالر کی مساوی دولت رکھتے ہیں۔ یہ دونوں عرب ممالک کے 25 ویں اور پوری دنیا کے 1533 ویں امیر ہیں۔

عرب ممالک کے امراء میں چھبیسویں نمبر پر36 سالہ لبنانی ایمن الحریر، 34 سالہ فہد الحریر، اردن کے 49 سالہ زیاد مناصیر، مصر کے 58 سالہ سمیح ساویرس، کویت کے 63 سالہ بسام الغانم، کویت ہی کے قتیبہ الغانم اور سوڈان کے محمد ابراہیم کی دولت برابر ہے اور وہ سب 1.1 ارب ڈالر دولت کے الگ الگ مالک ہیں۔ فوربز میگزین میں عرب امراء ان کا نمبر26 واں اور عالمی امراء میں 1712 واں ہے۔

فہرست میں شام کے ایک دیہاتی کروڑ پتی 66 سالہ محمد طراد کو عرب ممالک کا ’فقیر ارب پتی‘ کہا جاتا ہے اس کی دولت کی مالیت ایک ارب ڈالر ہے۔ عرب ممالک میں اس کا 27 واں اور پوری دنیا میں 1741 واں نمبر ہے۔

پانچ عالمی ارب پتی 03 کھرب47 ارب ڈالر کے مالک

فوربز جریدے نے رواں سال 291 ایسے امراء کو بھی شامل کیا ہے جو ماضی میں امراء کی فہرست میں شامل نہیں رہے ہیں۔ ان میں چین کے امراء سر فہرست ہیں۔ نئے شامل ہونے والوں میں 71 چینی، 57 امریکی، 28 بھارتی، 23 جرمن اور باقی دنیا کے دوسرے ممالک کے امراء بھی شامل ہیں۔ انہی میں شام کا ایک بدو عرب بھی شامل ہے جو اس وقت فرانس میں مقیم ہے۔ محمد طراد کے نام سے مشہور اس کی دولت ایک ارب ڈالر سے زیادہ ہے۔

رپورٹ کے مطابق دنیا کے پہلے پانچ ارب پتیوں کی کل دولت تین کھرب 47 ارب ڈالر سے زیادہ ہے۔ ان میں امریکی مائیکرو سافٹ کمپنی کے مالک بل گیٹس کی دولت 79 ارب 200 ملین ڈالر۔ بل گیٹس اسوقت دنیا کے دوسرے امیر ترین ہیں جبکہ پچھلے 21 سال سے وہ ٹاپ 16 میں شامل چلے آرہے ہیں۔

ان کے بعد لبنانی نژاد میکسیکوی کارلوس سلیم حلو کی دولت 77 ارب 100 ملین ڈالر ہے اور وارین بافٹ 72 ارب ڈالر دولت کے ساتھ تیسرے نمبر پرہیں۔ اسپین کے امانیسو اورٹیگا 64 ارب 500 ملین ڈالر اورلاری السون 54 ارب 300 ملین ڈالر کے ساتھ دنیا کے پانچویں امیر ترین شخص ہیں۔