ایرانی متعمرین کی پرواز سعودی فضاء سے کیوں نہ گذر سکی؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

سعودی عرب کی جنرل اتھارٹی آف سول ایوی ایشن نے ایران سے آنے والے ایک مسافر جہاز کو اپنی فضائی حدود میں داخل ہونے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا۔ جہاز پر 260 معتمرین مسافر سوار تھے۔

العربیہ ٹی وی نے سعودی محکمہ شہری ہوابازی کے بیان کے حوالے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ ایرانی مسافر جہاز کے پاس سعودی فضائی حدود سے گذرنے کا اجازت نامہ نہیں تھا۔ معمول کے طریقہ کار کے مطابق پیشگی اجازت کے بغیر کسی بھی طیارے کو سعودی عرب کی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہوتی۔ یہ اقدام ہوائی جہاز میں سوار مسافروں کی سلامتی کی خاطر کیا جاتا ہے۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ بغیر اجازت کے سعودی عرب کی فضاء استعمال کرنے پر پابندی صرف ایرانی طیاروں کے لیے نہیں بلکہ کسی بھی دوسرے ملک کے مسافر طیاروں کے لیے بھی پیشگی اجازت ضروری ہے اور سب کے لیے ایک ہی پالیسی ہے۔

محکمہ شہری ہوابازی کے بیان کے مطابق سعودی عرب سول ایوی ایشن عالمی پالیسی پر پابند ہے جس کے تحت کسی دوسرے ملک کی فضائی حدود سے گذرنے کے لیے عالمی اصولوں کی روشنی میں باقاعدہ پیشگی اجازت لینا ضروری ہوتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں