عازمینِ حج کے لیے تین زبانوں میں پہلی ایپلی کیشن کا اجراء

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

معروف عالم حدیث اور شاہ فیصل ایوارڈ یافتہ اسکالر ڈاکٹر محمد مصطفیٰ اعظمی نے عازمینِ حج کی رہ نمائی کے لیے ڈاکٹر نجیب قاسمی کی تیار کردہ موبائل ایپلی کیشن کا اجراء کردیا ہے۔

یہ ایپلی کیشن اردو ، انگریزی اور ہندی زبانوں میں ہے۔پہلی ''حجِ مبرور'' کے نام سے ہے اور یہ حج اور عمرے سے متعلق تین کتابوں ،نو تقریروں ،حج اور عمرے سے متعلق ایک پریزینٹیشن اور اکیس مضامین پر مشتمل ہے۔یہ ایپلی کیشن عازمین حج کے لیے ایک مفید رہ نما گائیڈ ہے۔وہ ان کتب اور مضامین کو کسی بھی وقت انٹرنیٹ کے کونیکشن کے بغیر بھی پڑھ سکتے ہیں۔

اس کے ساتھ حج اور عمرے سے متعلق سیکڑوں سوالوں کے جواب بھی دستیاب ہیں۔یہ دنیا میں اپنی نوعیت کی پہلی ایپلی کیشن ہے جس میں تین زبانوں میں عازمینِ حج کے لیے گراں قدر معلومات فراہم کی گئی ہیں۔

دوسری ایپلی کیشن کا عنوان ''دین اسلام'' ہے۔یہ زندگی کے مختلف پہلوؤں سے متعلق 175 مضامین ،75 تقریروں اور سات کتب پر مشتمل ہے۔یہ بھی دنیا میں تین زبانوں میں پہلی موبائل ایپلی کیشن ہے جس میں اکیس مذہبی موضوعات پر علمی خزینہ فراہم کیا گیا ہے۔

ڈاکٹر اعظمی نے ایپلی کیشن کے اجراء کے موقع پر کہا کہ ''آج اسلام دشمن عناصر اسلام پر تنقید کررہے ہیں لیکن انھیں مسلمانوں کے ذہنوں میں قرآن وحدیث کی حجیت سے متعلق شکوک وشبہات پیدا کرنے میں اپنی جانیں ہلکان کرنا پڑ رہی ہیں۔مستشرقین کی جانب سے اسلام اور قرآن کے بارے میں ان شکوک وشبہات اور سازشی نظریات کو مختلف یورپی زبانوں کے ذریعے پھیلایا جارہا ہے اور ہمارے اسلامی اسکالر ان سے آگاہ نہیں ہیں اور ان کا مقابلہ کرنےکی صلاحیت نہیں رکھتے ہیں''۔

انھوں نے کہا کہ ''صرف جرمنی میں قریباً ستر تنظیمیں مسلمانوں کے ذہنوں میں تدوین قرآن سے متعلق شکوک وشبہات پیدا کرنے کے لیے بیس سالہ منصوبے پر کام کررہی ہیں۔وہ دین اسلام کے مآخذ کے بارے میں مسلمانوں کے عقیدے کو کم زور کرنے کے لیے بھی کوشاں ہیں''۔

جامعہ ملیہ اسلامیہ ایلومینائی ایسوسی ایشن (الریاض) کے بانی رکن ڈاکٹر شفاعت اللہ خان نے کہا کہ ''انَٹرنیٹ آج معلومات کی تشہیر کا موثر ذریعہ ہے۔اس کو تعلیمی مقاصد،اسلام کی تبلیغ ،اسلام اور مسلمانوں سے متعلق غلط تصورات کو زائل کرنے کے لیے بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔انٹرنیٹ اس وقت تک ہماری روزمرہ زندگی میں ایک موثر ذریعہ رہے گا جب تک کہ اس کے متبادل کوئی نئی ٹیکنالوجی معرض وجود میں نہیں آجاتی۔ہمیں عام آدمی تک اسلامی تعلیمات پہنچانے کے لیے اس کو زیادہ سے زیادہ استعمال کرنے کی ضرورت ہے''۔

مذکورہ بالا دونوں ایپلی کیشن کی خصوصیات کے حوالے سے ڈاکٹر قاسمی نے بتایا کہ '' نئی ٹیکنالوجی کا ان کی تیاری میں استعمال کیا گیا ہے۔صارفین ان کو پلے اسٹور یا ایپلی کیشن اسٹور میں صرف ''نجیب قاسمی '' یا ''حجِ مبرور'' لکھ کر تلاش کرسکتے ہیں اور ان کو دو منٹ میں انسٹال کیا جاسکتا ہے''۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں