.

بیجنگ اور نیویارک کا فاصلہ دو گھنٹوں میں طے کرنا ممکن

ہائپر لوپ ٹکنالوجی 2020 کو دبئی میں متعارف کرائی جائے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کے رہائشی 2020 میں ابوظہبی اور دبئی کا فاصلہ [150کلومیٹر] صرف 15 منٹوں میں طے کر سکیں گے۔ اس امر کا انکشاف ماہر طبعیات اور معروف کاروباری شخصیت انجینئر پیٹر ڈیامنڈس نے کیا ہے۔

انجینئر پیٹر ڈیامنڈس نے واضح کیا کہ ایسا ہائپر لوپ ٹکنالوجی کو بروئے کار لا کر ممکن بنایا جائے گا۔ مقناطیسی ٹیوبز ٹکنالوجی میں چیزیں 1220 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے سفر کریں گی۔ اس نئی ایجاد پر امریکا میں کام ہو رہا ہے۔

اماراتی اخبار "البیان" میں شائع ہونے والے مسٹر پیٹر کے بیان کے مطابق دبئی شہر مستقبل کے شہروں کی قیادت کے لئے سب سے زیادہ اہل شہر ہے کیونکہ یہاں ہر شعبے میں سامنے انے والی ندرت فکر کو ہاتھوں ہاتھ لیا جاتا ہے، اس ضمن میں کسی قسم کے تعصب کا مظاہرہ نہیں کیا جاتا۔

ہائپر لوپ مواصلات کا نیا اسلوب سے جس میں چیزیں آواز کی رفتار سے تیز سفر کرتی ہیں۔ اس ٹکنالوجی کو بروئے کار لا کر نیویارک اور بیجنگ کے درمیان فاصلہ دو گھنٹوں میں طے ہو سکے گا۔

منصوبے کے مطابق اس تیز رفتار مواصلاتی میڈیم پر تجربات کا آغاز اگلے سال کیلیفورنیا سے ہو رہا ہے۔