.

سعودی خیراتی انجمن، یونیسکو کے درمیان تزویراتی شراکت

پیرس میں 'مسک الخیریہ' کی خدمات کو شاندار خراج تحسین پیش

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے سائنس وثقافت "یونیسکو" نے نوجوانوں کی فلاح وبہبود اور ان کی صلاحیتوں کو فروغ دینے کے لیے قائم کردہ تنظیم "محمد بن سلمان بن عبدالعزیز فائونڈیشن" [مسک الخیریہ] کی خدمات کو شاندار خراج تحسین پیش کرتے ہوئے تنظیم کے ساتھ تزویراتی شراکت پر مسرت واطمینان کا اظہار کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق "یونیسکو" کی ڈائریکٹر جنرل ایرینا بوکوفا نے پیرس میں 26 تا 28 اکتوبر کو منعقد ہونے والے نویں عالمی یوتھ فورم کے موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے 'مسک الخیریہ' کی خدمات کو سراہا۔

قبل ازیں مسز بوکوفا نے "مسک الخیریہ" کے جنرل سیکرٹری بدر العساکر سے اپنے دفتر میں ملاقات کی۔ العساکر کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے انہوں کہا کہ "یونیسکو" اور "مسک الخیریہ" کی باہمی تزویراتی شراکت نے نوجوانوں کو اپنی صلاحیتوں کو فروغ دینے میں معاونت کے ساتھ نوجوانوں کے مسائل کو عالمی فیصلہ سازوں تک پہنچانے میں اہم کر دار ادا کیا ہے۔

بدر العساکر اور مسز بوکوفا کے درمیان ہوئی ملاقات میں دونوں تنظیموں کے درمیان شراکت کا دائرہ بڑھانے اور مستقبل میں نوجوانوں کی بہبود کے نئے منصوبے شروع کرنے پر بھی اتفاق کیا گیا۔

فورم میں سعودی نوجوانوں کی شرکت

چھبیس اکتوبر کو پیرس میں منعقدہ یوتھ فورم میں سعودی عرب کی جانب سے 10 نوجوانوں نے شرکت کی۔ سعودی نواجوانوں کے وفد کی نمائندہ منار الصقعوب نے کی۔ انہوں نے ڈویلپمنٹ کے شعبے میں اپنے تجربات سے خاضری کو آگاہ کیا۔ منار الصقعوب کی عمومی زندگی اور اس کی مہارتوں کے اظہار کو کانفرنس میں موجود تمام حاضرین نے سراہا۔

فورم میں "مسک الخیریہ" کی جانب سے ایک دستاویزی فلم بھی پیش کی گئی جس میں تنظیم کے قیام کے اغراض ومقاصد اور اب تک نوجوانوں کی بہبود کے پروگراموں میں ہونے والی کامیابیوں کی تفصیلات بیان کی گئی ہیں۔

خیال رہے کہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز فائونڈیشن"مسک الخیریہ" بالخصوص سعودی عرب، بالعموم پوری دنیا میں نوجوانوں کے مسائل کو اجاگر کرنے، ان کی فنی مہارتوں میں اضافہ کرنے، کاروبار، تعلیم، ٹکنالوجی، ثقافت اور سماجی شعبوں میں ان کی معاونت کرنے میں سرگرم ہے۔