مکہ سیکرٹریٹ کی جگہ دنیا کی تیسری فلک بوس عمارت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

مسلمانوں کے مقدس ترین شہر مکہ مکرمہ کے سیکرٹریٹ نے حرم مکی کے قریب واقع مشہور کالونی المعابدہ میں اپنا دفتر مشروط طور پر خالی کرنے کی رضامندی ظاہر کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نے کثیر الاشاعت عرب اخبار 'مکہ' کے حوالے سے اپنی رپورٹ میں بتایا ہے کہ مکہ لائٹ ہاؤس انوسٹمنٹ کمپنی حرم مکی سیکرٹریٹ کی جگہ المعابدہ میں ایک سو منزلہ فلک بوس عمارت تعمیر کرے گی۔ دنیا کی اس تیسری بلند ترین عمارت میں ہوٹل سمیت دیگر انوسٹمنٹ منصوبے شامل ہوں گے۔

عمارت کے سب سے بلند ٹاور میں حرم مکی سیکرٹریٹ کے ان ارباب حل وعقد کے دفاتر ہوں گے جہاں سے وہ مسجد الحرام ریجن اور دیگر مقدس مقامات کی نگرانی کا فریضہ سرانجام دے سکیں گے۔

انوسٹمنٹ منصوبے کے اسسٹنٹ جنرل سیکرٹری کے نائب نے بتایا پروجیکٹ فیزیبلٹی کے لئے کئی سال درکار ہوں گے اور دوران المعابدہ میں موجود حرم مکی کمپلیکس کو متبادل جگہ منتقل کیا جائے گا۔ ان متبادل جگہوں کے لئے مکہ کے مشرقی اور جنوبی علاقے کا چناؤ کیا جا سکتا ہے۔ تیسری ممکنہ جگہ مکہ کے مغربی علاقے میں بھی ہو سکتی ہے۔

متذکرہ تینوں مقامات میں ایک لاکھ مربع میٹر مساحت موجود ہے۔ فیصلہ بولی اور ٹینڈرز کے اعلان کے بعد کیا جائے۔ منصوبہ آئںدہ برسوں میں اسی جگہ روبعمل لایا جائے گا جہاں اس وقت مکہ سیکرٹریٹ موجود ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ حتمی فیصلہ مکہ مکرمہ کے سیکرٹری کا ہو گا تاکہ اس وقت تک منصوبہ کا جائزہ مکمل ہو جائے اور سرمایہ کار سیکرٹریٹ کے لئے نئے ڈیزائن پیش کر سکیں کیونکہ اب تک دی جانے والی پریزنٹیشنز کی نوعیت حتمی نہیں، بلکہ مشاوراتی ہے۔

حرم مکی سیکرٹریٹ کے اسسٹنٹ جنرل سیکرٹری نے بتایا کہ موجودہ بلڈنگ اور ایک سو منزلہ عمارت کا تعمیراتی خاکہ بین الاقوامی مشاورتی فرم سے تیار کروایا گیا ہے۔ ہم نے مشاورتی فرم سے کہا ہے کہ وہ نئی عمارت کو سیکرٹریٹ کی موجودہ عمارت سے ہم آہنگ کریں اور اس میں روایتی توانائی کے بجائے دوبارہ قابل استعمال توانائی کے طریقے استعمال کئے جائیں۔

مقدس دارلحکومت کے جنرل سیکرٹری نے بتایا کہ دنیا کی تیسری بلند ترین عمارت کے اس منصوبے پر پانچ بلین ریال لاگت کا اندازہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ دنیا میں بلند ترین عمارتوں کی تعمیر میں بڑھتی ہوئی مسابقت کو سامنے رکھتے ہوئے امکانی طور پر اپنی تکمیل کے وقت یہ منصوبہ دنیا کی دسویں بلند ترین عمارت ہو گا۔

اسسٹنٹ جنرل سیکرٹری کے مطابق عمارت کے سب سے بلند ٹاور میں حرم مکی سیکرٹریٹ کے ان ارباب حل وعقد کے دفاتر ہوں گے جہاں سے وہ مسجد الحرام ریجن اور دیگر مقدس مقامات کی نگرانی کا فریضہ سرانجام دے سکیں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں