.

برج الخلیفہ کے نزدیک ہوٹل میں آگ لگ گئی

نئے سال کی تقریبات پروگرام کے مطابق جاری رہیں گی: دبئی میڈیا سینٹر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

نئے سال کی تقریبات کے آغاز سے دو گھنٹے قبل جمعہ کی شب ڈاؤن ٹاون دبئی میں دنیا کی بلند ترین عمارت برج الخلیفہ کے سامنے واقع ایک مشہور ہوٹل میں اچانک آگ بھڑک اٹھی، جس نے دیکھتے ہی دیکھتے ہوٹل کے سامنے والے حصے کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

دبئی شہری دفاع کے حکام نے اعلان کیا ہے کہ آگ لگنے کے باوجود ایمرٹس میں نئے سال کی تقریبات شیڈول کے مطابق جاری رہیں گی۔

العربیہ کے مطابق بیسویں منزل سے لگنے والی یہ آگ پہلے ہوٹل کی اوپر والی منزلوں میں بھڑکی اور بعد میں ہوٹل کی ذیلی منزلیں بھی اس کی لپیٹ میں آ گئیں۔ فوری طور پر آگ لگنے کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی۔

پینسٹھ منزلہ ہوٹل کو فوری طور پر خالی کروا لیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ قریبی عمارتیں بھی خالی کروا کی گئی ہیں۔ آگ بجھانے کے لئے دبئی شہری دفاع کے طیاروں نے بھی حصہ لیا، تاہم تیز ہوا کے باعث آگ ہوٹل کے دیگر حصوں تک پھیل گئی۔

العربیہ سے بات کرتے ہوئے دبئی شہری دفاع کے سربراہ جنرل راشد المطروشی نے بتایا کہ آگ بجھانے کے لئے جدید ترین وسائل استعمال کیے جا رہے ہیں۔ اس پوری کارروائی شہری دفاع کی چار ٹیمیں حصہ لے رہی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ آتشزدگی سے کسی شخص کے ہلاک یا زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ملی۔

درایں اثنا متحدہ عرب امارات کے پالیسی سینٹر کی سربراہ ابتسام الکتبی نے العربیہ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جائے حادثہ کے اردگرد علاقے میں دنیا بھر سے لاکھوں افراد نئے سال کے حوالے سے برج الخلیفہ سے شروع ہونے والی شاندار آتش بازی کا مظاہرہ دیکھنے کے لئے جمع ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آتشزدگی کی کارروائی کسی منصوبہ بندی کا نتیجہ نہیں کیونکہ دبئی میں سیکیورٹی کی الرٹ صورتحال میں ایسا کرنا ممکن نہیں۔