.

لندن: وحشیانہ ڈکیتی کی ویڈٰیو جاری

ملزمان رولکس کمپنی کی بیش قیمت گھڑی چھین کر فرار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانوی پولیس نے حال ہی میں دارالحکومت لندن میں سنہری گھڑی’’رولکس‘‘ کی ڈکیتی کی ایک خوفناک ویڈیو جاری کی ہے جس میں دو ملزمان کو ایک دفتر میں گھس کرایک شخص کو زدو کوب کرنے کے بعد اس کی گھڑی چھین کر فرار ہوتے دکھایا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے برطانوی اخبار ’’ڈیلی میل‘‘ کے حوالے سے خوفناک ڈکیتی کا احوال بیان کیا ہے اور بتایا ہے کہ ڈکیتی کا نشانہ بننے والا برطانوی شہری 46 سالہ روی جیمز لندن میں کاریں کرائے پردینے کے دفتر میں بیٹھا تھا کہ اچانک دو نقاب پوش افراد اس کے دفتر میں گھسے۔ انہوں نے اندر داخل ہوتے ہی جیمز کو دبوچ لیا۔

اخباری رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ 10 فروری کو پیش آیا تاہم پولیس نے اس واقعے کی فوٹیج بعد میں جاری کی ہے۔ خفیہ کیمرے کی مدد سے تیار کی جانے والی ویڈیو نشر کرنے کا مقصد واردات میں ملوث عناصر کی نشاندہی میں مدد حاصل کرنا اور ان کی گرفتاری عمل میں لانا ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیاہے کہ دو نقاب پوش نوجوان دفتر میں موجود جیمز کو دبوچ لینے کے بعد اس کی کلائی پرباندھی گراں قیمت رولکس کمپنی کی سنہری گھڑی اتار لیتے ہیں۔ اس گھڑی کی مارکیٹ میں قیمت 21 ہزار 500 ڈالر بتائی جاتی ہے۔ قیمتی گھڑی کے حصول کے لیے ڈکیت وحشیانہ طریقے سے گھڑی کے مالک کو زدو کوب کرتے ہیں۔ انہوں نے جیمز کی ہاتھ سے ایک سنہری انگشتری بھی اتارنے کی کوشش کی تاہم وہ اس میں ناکام رہے۔

تاہم گھڑی اتارنے کےبعد وہ تیزی سے باہر جاتے دکھائی دیتے ہیں جہاں ایک کار ان کی منتظر ہے۔ کار میں ایک دوسرا مرد اور خاتون بھی موجودہیں۔

خوف اور دہشت کی وجہ سےجیمز پر کپکپی طاری ہوجاتی ہے اور اسے علاج کے لیے ڈاکٹر سے رجوع کرنا پڑتا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ویڈیو سے دکھائے گئے منظر سے معلوم ہوتا ہے کہ ڈکیت جیمز کو جانتے تھے۔ انہیں یہ بھی معلوم تھا کہ اس کے بازو پرایک گراں قیمت گھڑی ہے کیونکہ وہ دفترمیں داخل ہونے کے بعد سیدھے اس کی طرف بڑھے ۔ ان میں سے ایک ان اس کا گلا دبوچ لیا اور دوسرے نے بازو پر باندھی گھڑی کھولی اور فرار ہوگئے۔