.

دوران پرواز سعودی طیارے کے پائلٹ کا انتقال

موت حرکت قلب بند ہونے باعث ہوئی، طیارے کا کنٹرول معاون نے سنبھال لیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

#سعودی_عرب میں ایک مسافر بردار طیارے کا پائلٹ دوران پرواز طیارے کی لینڈنگ سے قبل حرکت قلب بند ہونے سے انتقال کرگیا۔ طیارے کے معاون ہواباز نے پیشہ وارانہ مہارت کا مظاہرہ کرتے ہوئے طیارے کا کنٹرول اپنے ہاتھ میں لے لیا اور اسے اتار لیا گیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی فضائیہ کی تاریخ کا یہ افسوسناک واقعہ گذشتہ روز اس وقت پیش آیا جب سعودی ائیرلائن کی پرواز نمبر 1734 ملک کے جنوب مغربی علاقے عسیر کے بیشہ ہوائی اڈے سے مسافروں کو لے کر #ریاض میں شاہ خالد ہوائی اڈے آ رہی تھی کہ لینڈنگ سے چند منٹ قبل طیارے کا پائلٹ ولید بن محمد المحمد کو اچانک دل کا دورہ پڑا اور انہوں نے طیارے کا کنٹرول چھوڑ دیا۔ اس موقع پر معاون ہواباز رامی بن غازی نے پیشہ وارانہ مہارت کا مظاہرہ کرتے ہوئے طیارے کا کنٹرول سنبھال لیا۔

سعودی عرب کی سرکاری ائیرلائن اور فضائیہ نے معاون ہوابازکی جانب سے طیارے کوی فوری طورپر کنٹرول کرنے کو سراہا اور کہا کہ رامی بن غازی نے ایمرجنسی حالت میں مسلمہ عالمی اصولوں کے مطابق کارروائی کرتے ہوئے طیارے کا کنٹرول سنھبال کر مسافروں کو محفوظ رکھا ہے۔

طیارے کو محفوظ طور پر اتارے جانے کے فوری بعد طبی عملہ ایمبولینس کے ساتھ ہوائی اڈے پر پُہنچا۔ ڈاکٹروں نے طیارے کے پائلٹ کا معائنہ کیا مگر وہ تب تک انتقال کرچکے تھے۔ ڈاکٹروں نے ان کی موت کی تصدیق کردی۔

سعودی ایئرلائن کے ڈائریکٹر جنرل انجینیر صالح بن ناصر الجاسر نے فوت ہونے والے پائلٹ کے اہل خانہ سے تعزیت کرتے ہوئے ان کی اچانک موت پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔