.

مچھر کو معمولی سمجھنے والے اس برازیلی کا حال دیکھیں

مچھر کے کاٹنے سے انسانی پاؤں ہاتھی کے پیر میں تبدیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مچھر کو عموما لوگ معمولی خیال کرتے ہیں اور اس کے ڈںگ سے بچنے کاکوئی خاص اہتمام نہیں کیاجاتا مگر یہ اڑنے والا ننھا کیڑا انتہائی خطرناک بھی ثابت ہوسکتا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق برازیل میں ایک شخص کے پاؤں پر مچھر نے کاٹا تو اس کے باعث اسے ایک خطرناک مرض لاحق ہوا جس سے اس کا پاؤں ہاتھی کے پاؤں کی طرح ہوگیا۔

اخبار ڈیلی میل کے مطابق برازیلی شہری رایموندو کو کچھ عرصہ قبل مچھر نے کاٹا تو اسے ہاتھیوں کو لاحق ہونے والے ’’لیمفیٹک فلاریسیس‘‘ نامی مرض لاحق ہوگیا۔ اس کا ایک پاؤں سوجنا شروع ہوگیا۔ یہاں تک کہ اسے بیساکھیوں کا سہارا لینا پڑا مگر پاؤں کی سوجن مسلسل بڑھتی چلی گئی یہاں تک کہ اب اس کا پاؤں ہاتھی کے پاؤں جیسا ہوچکا ہے۔ حتیٰ کہ اس کا رنگ بھی ہاتھی کے پاؤں کی طرح مٹیالے رنگ کا ہے اور اس پر بڑی بڑی سلوٹیں پڑ چکی ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ مچھر کے کاٹنے سے ہاتھیوں کو لاحق ہونے والی لمفیٹک بیماری دراصل انسانی اور حیوانی جسم کی رگوں اور نالیوں پر مشمل ’لمفیٹک نظام‘ کو براہ راست متاثر کرتی ہے۔ اس بیماری کے باعث جسم کا متاثرہ حصہ پھولنا شروع ہوتا ہے اور غیرمعمولی حد تک پھولتا چلا جاتا ہے۔ اگر یہ وائرس سر اور اعضاء تناسل کو متاثر کرے تو وہ خاص طور پر پھولتے چلے جاتے ہیں۔

بعض اوقات اس بیماری کے آثار جسم کے بیرونی حصے پر دکھائی نہیں دیتے بلکہ یہ غدود اور گردوں کو متاثر کرتے ہیں۔

برازیلی شہری کی جانب سے اپنے پاؤں کے علاج کے لیے متعدد بار کوشش کی مگر حال ہی میں ساؤجوز ریو بیٹو نے رایمونڈو کاعلاج کیا اور سرجری کی مدد سے پھولے ہوئے پاؤں کو ہلکا کیا ہے۔

اس نوعیت کے زیادہ تر کیسز افریقا، وسطی اور جنوبی امریکا اور جنوبی ایشیا میں سامنے اتے رہتے ہیں۔