.

نیا کاروبار: جادو کے توڑ کی کریم اور جن بھگانے کا تیل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

"دم کرنے والوں" کی برکت کی تلاش میں حال ہی میں پھیلنے والی ایک روش نے متعدد غذائی مصنوعات اور خواتین کی زیب و زینت کے سامان کو " پڑھا ہوا" کا اسٹیکر چسپاں کر کے اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔

پڑھنے والے کو آب زمزم ، تیل یا زعفران کی بوتل پر محض "اپنی چند سانسیں" پھونکنا ہوتی ہیں۔ یہاں تک کہ یہ مصنوعات علاج کے لیے ایسی دوا میں تبدیل ہو جاتی ہیں کہ وہ دنیا بھر کے طبی تحقیق کے خصوصی مراکز کو "عاجز" کر دیتی ہیں۔ وہ مراکز جو جدید دور کے امراض کی دواؤں کی تیاری کے لیے دن رات ایک کر کے کامیاب تحقیق کے واسطے اپنے کام میں جُتے رہتے ہیں۔

عام طور پر ہر دم کرنے والی کی اپنی پنساری کی دکان ہوتی ہے جس کی سعودی عرب کے اندر اور خلیجی ممالک میں بھی دیگر شاخیں ہوتی ہیں۔ پنساری کی دکانوں اور دم کرنے والوں کے میدان میں مقابلہ اس حوالے سے بڑھ رہا ہے کہ ہر کوئی ایسی مصنوعات دریافت کرنے میں مصروف ہے کہ ان کا احاطہ نہ کیا جاسکے۔ ان میں ڈپریشن اور وسوسے کا خاتمہ کرنے، خوف اور دہشت کے آثارکم کرنے، جن کو بھگانے اور جادو نکالنے کے مرکبات شامل ہیں۔

مثال کے طور پر "زعفران" کا مرکب ہے۔ یہ یا تو تیار حالت میں چھوٹے ڈبوں میں بھرا ہوا ملے گا اور یا پھر دوران تیاری اس کو خریدا جاتا ہے۔ اس کا استعمال پینے یا غسل میں کیا جاتا ہے۔

جہاں تک "صبخہ" کا تعلق ہے تو ہر دم کرنے والے کے لحاظ سے اس کے ناپ تول اور اجزاء مختلف ہوتے ہیں۔ یہ بیری، مہندی اور لہسن کا مرکب بھی ہوسکتا ہے اور کبھی گندم اور میتھی پر بھی مشتمل ہوتا ہے۔ یہ نفسیاتی مسائل میں گھرے مریضوں کے لیے ہوتا ہے ۔

اسی طرح "بانجھ پن اور حمل میں تاخیر کے علاج کی بوٹی" کے نام سے معروف دوا بھی ہے۔ اسی مقصد کے لیے شرعی تعویذ کا مرکب بھی ہوتا ہے جو روغن زیتون، زیرہ اور پسی ہوئی ہینگ سے تیار ہوتا ہے۔

5 شیوخ کے دم کیے ہوئے روغن

"العربیہ ڈاٹ نیٹ" نے پنساری کی دکانوں پر شرعی تعویذ کی مصنوعات کی تلاش کے لیے سعودی دارالحکومت ریاض کے ایک بازار کا دورہ کیا۔

خریدار کو ایک ہی دکان پر مشہور قاریوں کے ناموں کے ساتھ جادو کے توڑ اور جن بھگانے کے لیے مختلف تعویذ مل سکتے ہیں۔ ایک پنساری کی دکان پر کام کرنے والے ایشیائی ملازم نے بتایا کہ " بعض روغن زیتون ہوتے ہیں جن پر ایک ہی شیخ نے دم کیا ہوتا ہے جب کہ ہمارے پاس ایسے روغن بھی موجود ہیں جن پر پانچ مشہور شیوخ نے دم کیا ہوا ہے اور ان کی تاثیر زبردست ہوتی ہے"۔

"دم کیا ہوا" پانی 5 ریال میں

ایک دکان پر دم کیے ہوئے پانی کی 5 ریال والی بوتل کے بارے میں معلوم کیا تو دکان کے ذمہ دار نے اثبات میں جواب دیتے ہوئے بتایا کہ " ان قاری کی 100% ضمانت ہے۔ جو کوئی بھی ان کے تعویذ کا پانی پیتا ہے وہ اپنے حال میں بڑا فرق محسوس کرتا ہے"۔

اسی ذمہ دار نے صفائی کے حوالے سے یہ بتایا گیا کہ شرعی تعویذ کے قاریوں کے پانی کے تمام پیک غیر محبوس ہوتے ہیں یعنی کہ وہ ایئر ٹائٹ نہیں ہوتے۔ تاہم ایک مشہور قاری ہیں ان کے دم کیے ہوئے پانی کی بوتلیں محبوس ہوتی ہیں کیوں کہ وہ ان کے کارخانے میں خصوصی طور پر پیک کی جاتی ہیں۔

روحانی معالجین کی دنیا کا کھوج لگاتے ہوئے معلوم ہوا کہ ان افراد کے پاس آنے والا مریض جب باہر نکلتا ہے تو اس کے ہاتھوں میں زیتون کے تیل کے مختلف مرکبات کی بوتلیں اور ڈبے ہوتے ہیں، جادو کے توڑ اور جن کو بھگانے کے لیے چھڑکاؤ ہوتے ہیں یا پھر تعویذ دم کرنے والے کی طرف سے پھونکا ہوئے مشروبات ہوتے ہیں جو اعصاب اور ہذیانی وہموں کے علاج کے واسطے ہوتے ہیں۔ ان اشیاء کی مجموعی قیمت لگ بھگ 250 سے 300 ریال تک ہوتی ہے۔

"طبی علاج" کے تمام مواد کی ضبطی

اس حوالے سے جنرل اتھارٹی فار فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن کے ڈپٹی چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر ابراہیم الجفالی نے

العربیہ ڈاٹ نیٹ کو بتایا کہ مختلف طبی علاجوں کے دعوے کے تحت جتنے عوامی مرکبات پھیلے ہوئے ہیں خواہ وہ جڑی بوٹیوں کے مرکبات ہوں یا شہد جیسے غذائی مرکبات، یا پھر آرائش کا سامان یہ تمام لوازمات برآمد کرکے ضبط کیا جائے گا اور پنساری کی دکانوں پر ان چیزوں کی فروخت کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

انہوں نے مزید بتایا کہ "اگر کوئی شخص اپنی مصنوعات کی بطور علاج کی دوائی تشہیر کرنا چاہتا ہے تو لازما پہلے اسے اپنی مصنوعات کو جنرل اتھارٹی فار فوڈ اینڈ ڈرگ کے پاس رجسٹرڈ کرانا ہوگا تاکہ اس کی کوالٹی کی تصدیق کی جاسکے۔ جب ہمارے پاس اس کی کوالٹی کی تصدیق ہوجائے گی تو پھر ہم اس کا پرمٹ جاری کریں گے۔ اس کے سوا تمام مرکبات کو ضبط کیا جائے گا"۔

الجفالی کے مطابق " اتھارٹی کی مشترکہ کمیٹیاں ہیں جو بلدیاتی اداروں کے تعاون سے پنساری کی دکانوں کی نگرانی کررہی ہیں۔ طبی علاج مثلا شوگر اور الرجی جیسے امراض کے علاج کا دعوی کرنے والی مصنوعات کو بڑی تعداد میں ضبط کیا جارہا ہے"۔

تاہم الجفالی نے واضح کیا کہ "جادو، آسیب اور جن وغیرہ سے متعلق جو جڑی بوٹیوں کی مصنوعات ہیں وہ براہ راست شکل میں متعلقہ اداروں کی نگرانی میں نہیں۔ اس لیے کہ ان کا دعوی طبی علاج کا نہیں بلکہ یہ صرف مذہبی ورثہ ہے"۔

دم کیے ہوئے پانی کے پیک کے بارے میں الجفالی نے بتایا کہ اتھارٹی نے اس کی فروخت اور تجارت ممنوع قرار دینے سے متعلق فیصلہ جاری کردیا ہے اور اس کی نمائش پر تمام پنساری کی دکانوں کا چالان ہوگا۔