امریکا میں ہتھکڑی:اماراتی شہریوں کو بیرون ملک روایتی لباس نہ پہننے کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات کی حکومت نے اپنے شہریوں کو بیرون ملک سفر کے دوران روایتی ملکی ملبوسات نہ پہنے کی ہدایت کی ہے۔

اماراتی شہریوں کو یہ انتباہ امریکی ریاست اوہائیو میں ایک اماراتی شخص کو دہشت گردی کے خطرے کے پیش نظر ہتھکڑی پہنائے جانے کے واقعے کے بعد جاری کیا گیا ہے۔

متحدہ امارات کی وزارت برائے خارجہ امور نے ایک ٹویٹ میں کہا ہے کہ اماراتی شہریوں کو اپنے تحفظ کے پیش نظر روایتی لباس پہننے سے گریز کرنا چاہیے۔وزارت نے ایک الگ بیان میں خواتین پر زوردیا ہے کہ وہ یورپ کے بعض ممالک میں سفر کے دوران چہرے کے نقاب پر پابندی کی پاسداری کریں۔

مقامی میڈیا نے اتوار کو اطلاع دی ہے کہ ایک اماراتی شہری احمد المنہالی کو گذشتہ ہفتے امریکی ریاست اوہائیو کے شہر آوون میں روایتی لمبی آستین والی سفید قمیص پہننے اور سرپوش اوڑھنے پر پولیس نے بندوق کی نوک پر گرفتار کر لیا تھا۔اس کو وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا تھا اور ہتھکڑی پہنا دی تھی۔یہ کارروائی اس اماراتی کے جائے قیام ہوٹل کی ایک خاتون کلرک کی اطلاع کے بعد عمل میں آئی تھی۔اس کو یہ شک گزرا تھا کہ اس اماراتی کا داعش سے تعلق ہوسکتا ہے۔

کلیو لینڈ کے ویوز ٹی وی نے پولیس کیمرے سے المنہالی کی گرفتاری سے متعلق ویڈیو فوٹیج پوسٹ کی ہے۔بعد میں اس کی آوون کے حکام سے ملاقات بھی ہوتی ہے جس میں حکام اس سے پولیس تشدد اور تمام ناخوشگوار واقعے پر معذرت کرتے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں