.

35 برس سے کم عمر دنیا کے 5 کم سن ترین ارب پتی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایسی کاروباری شخصیات اور صاحب ثروت افراد کی بہت سی کہانیاں سامنے آچکی ہیں جنہوں نے اپنی دولت کے انبار لگانے کے لیے طویل دہائیوں تک جدوجہد کی۔ تاہم بعض لوگ ایسے بھی ہوتے ہیں جو بہت چھوٹی عمر میں ہی مٹی کو سونے میں تبدیل کردیتے ہیں۔

اب دولت کے پہاڑ کھڑے کرنے کے لیے ماضی کی طرح کئی دہائیاں یا طویل برس کی ضرورت نہیں رہی، ٹیکنالوجی سیکٹر اور سماجی ویب سائٹوں کے انقلاب نے متعدد نوجوان ارب پتی تیار کر دیے۔

سال 2016 کے لیے امریکی جریدے "فوربز" کی فہرست میں 66 شخصیات ایسی ہیں جن کی عمر 40 برس سے زیادہ نہیں۔ ان افراد کی مجموعی دولت 197.2 ارب ڈالر سے زیادہ ہے۔ ان میں 36 ایسے افراد ہیں جنہوں نے ذاتی جدوجہد سے اپنی ثروت کا پہاڑ کھڑا کیا۔

فہرست سے یہ بات نمایاں ہوتی ہے کہ ارب پتی نوجوانوں میں اکثریت نے اپنی ذاتی دولت، اختراع اور تخیل کے ساتھ وسیع پیمانے پر اچھی قسمت کے ذریعے حاصل کی۔

جن 36 ارب پتی افراد نے اپنے لیے خصوصی راستے کو خود نکالا، ان میں تین چوتھائی سے زیادہ کی زندگی میں نقطہ انقلاب کا سبب ٹکنالوجی سیکٹر میں اختراع بنی۔ ان میں 25 ارب پتی ایسے ہیں جن کی دولت نئی قائم کردہ کمپنیوں میں سرمایہ کاری کے ذریعے حاصل ہوئی، ان کمپنیوں کا اصل سرمایہ ایک ارب ڈالر سے زیادہ کا ہوچکا ہے۔ ان میں متعدد کمپنیاں مثلا Snapshot ،Pinterest ، Airbnb اور Uber آج سے 10 سال پہلے تک موجود نہ تھیں۔

چینی کمپنی "Hurun" بھی دنیا کے امیر ترین افراد کی سالانہ فہرست جاری کرتی ہے۔ کمپنی نے اپنی آخری رپورٹ "ذاتی جدوجہد سے دولت مند بننے والے کم سن ترین افراد جن کی عمر 35 برس سے کم ہے" کے نام سے جاری کی۔ رپورٹ کے مطابق "اسنیپ چیٹ" ایپلی کیشن کا بانی 25 سالہ Evan Spiegel ٹکنالوجی سیکٹر کے کم عمر ترین دولت مندوں کی فہرست میں سرفہرست ہے۔ وہ گزشتہ برس 1.5 ارب ڈالر کی دولت کے ساتھ پہلی مرتبہ امیر ترین افراد کی فہرست میں نمودار ہوا تھا۔ تاہم مئی میں کمپنی نے تیزی کے ساتھ ترقی کی جس کے نتیجے میں اسپیگل کی دولت 2.1 ارب دالر تک پہنچ گئی۔

دوسرے نمبر پر "اسنیپ چیٹ" کمپنی کی تاسیس میں حصہ لینے والا 26 سالہ بوبی مرفی ہے۔ وہ 1.8 ارب ڈالر کی مجموعی دولت کے ساتھ ذاتی جدوجہد سے ارب پتی بننے والا دوسرا کم سن ترین نوجوان ہے۔

تیسرے اور چوتھے نمبر پر بالترتیب 26 اور 27 سالہ دو بھائی جان اور پیٹرک کولیسن ہیں۔ ان دونوں میں ہر ایک کی دولت کا حجم تقریبا 1 ارب ڈالر ہے۔ وہ 2011 میں انٹرنیٹ کے ذریعے ادائیگی کرنے والی امریکی کمپنیStripe کے بانی ہیں۔ گزشتہ اکتوبر میں اس کمپنی کی مالیت کا اندازہ 5 ارب ڈالر کے قریب لگایا گیا۔ دونوں بھائی اس وقت سان فرانسسکو میں مقیم ہیں جہاں ان کی کمپنی کا صدر دفتر واقع ہے ۔

یہ بات تو درست ہے کہ "فیس بک" کمپنی کے بانی اور چیف ایگزیکٹو 31 سالہ مارک زکربرگ سب سے کم عمر ارب پتی نہیں ہیں تاہم یقینا وہ ٹیکنالوجی سیکٹر میں ذاتی جدوجہد سے دولت حاصل کرنے والے 35 برس سے کم عمر نوجوانوں میں امیر ترین شخصیت ہیں۔

تازہ ترین اعداد و شمار کے مطابق زکر برگ فیس بک کمپنی میں 47 کروڑ 52 لاکھ حصص کے مالک ہیں۔ گزشتہ روز یعنی پیر کو اس کے شیئر کی قیمت 116.87 ڈالر تھی۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ زکربرگ کی مجموعی دولت اس وقت 55.5 ارب ڈالر سے زیادہ ہے۔