.

شاہ سلمان کی دعوت پر دنیا بھر سے 1400 خوش نصیب حج ادا کریں گے

’خادم الحرمین الشریفین حج پروگرام کا مقصد اسلامی اخوت وبھائی چارے کا فروغ ہے‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فرمانروا خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے60 ممالک کے 1400 مسلمانوں کے سرکاری اخراجات پرحج کے انتظامات کا حکم دیا ہے۔ سعودی عرب کی سرکاری میزبانی کے تحت فریضہ حج ادا کرنے والے خوش نصیبوں کا تعلق براعظم ایشیا، افریقا اور یورپ سے ہے جو سنہ 1437ھ کے حج کے موقع پر سعودی عرب کی خصوصی دعوت پر فریضہ حج ادا کریں گے۔ سعودی عرب کے خصوصی مہمانوں کے حج کے انتظامات کی سرپرستی وزارت مذہبی امور و شعبہ دعوت ارشاد کرے گا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی وزارت مذہبی امور کے وزیراور خادم الحرمین حج پروگرام کے نگران الشیخ صالح بن عبدالعزیز بن محمد آل الشیخ نے بتایا کہ شاہ سلمان کی طرف سے ڈیڑھ ہزار مسلمانوں کے خصوصی حج کا اعلان اسلامی اخوت و بھائی چارے، باہمی محبت و بھلائی کے جذبے کا عکاس ہے۔ انہوں نے مشرق و مغرب میں بسنے والے 1400 مسلمانوں کو اس سال فریضہ حج کے لیے خصوصی طورپر مدعو کرکے عالم اسلام سے اپنی ہمدردی اور جذبہ اخوت کا اظہار کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ شاہ سلمان بن عبدالعزیز عالم اسلام میں اتحاد اور یگانگت کے فروغ کے خواہاں ہیں۔ یہی وجہ ہے وہ شرق وغرب کے تمام مسلمانوں کے ساتھ رابطوں کے فروغ کو اہمیت دیتے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں سعودی وزیر مذہبی امور کا کہنا تھا کہ خادم الحرمین الشریفن کی طرف سے خصوصی حج اسکیم کے شروع ہونے کے بعد اب تک اس پروگرام سے 24 ہزار مسلمان حج ادا کرچکے ہیں۔

آل الشیخ کا کہنا تھا کہ خادم الحرمین حج اسکیم کے تحت انڈونیشیا، ملائیشیا، فلپائن، بھارت، پاکستان، ترکی، بنگلادیش، سری لنکا، تھائی لینڈ، افغانستان، برما، مالدیپ، نیپال، نائیجریا، سینیگال، ایتھوپیا، کیمرون، صومالیہ، گھانا، چاڈ، مالی، ساحل العاج، نیجر، جنوبی افریقا، کینیا، وسطی افریقا، بورکینا فاسو، اریٹیریا، کانگو، برازفیل، سیرالیون، زمبابوے، کیمرون، ٹوگو، بوزوانا، جنوبی سوڈان، مقدونیا، بوسنیا ہرزوگوینا، یوکرائن، کرغیزستان، ازبکستان، تاجکستان، قازقستان، ترکمانستان، آذر بائیجان، فجی، البانیا، کوسوو، سیشل، بیساؤ، مڈگاسقر یوگنڈا، بنین، گینیا، کوناکری، موزنبیق، بوروندی، رینیون، ملاوی اور زامبیا کے مسلمانوں کو دعوت دی گئی ہے۔