.

شاہ عبدالعزیز نے ’باب کعبہ‘ کیسے بنوایا؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مُملکت سعودی عرب کے بانی شاہ عبدالعزیز بن عبدالرحمان آل سعود نے زمام اقتدار سنبھالنے کے بعد بیت اللہ کی دیکھ بحال کی ذمہ داریاں نبھانے کا فیصلہ کیا۔ بیت اللہ کے دیگر امورکی انجام دہی کے ساتھ سنہ 1363ھ میں انہوں نے خانہ کعبہ کے مرکزی دروازے کو نئے انداز میں تیار کرانے کا بیڑا اٹھایا۔

سعودی عرب کی سرکاری پریس ایجنسی ’واس‘ نے ’باب کعبہ‘ کی تیاری کے مراحل اور طریقہ کار پر روشنی ڈالی ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ باب کعبہ کی تیاری میں تین سال کا عرصہ لگا۔ باب کعبہ حسب معمول دو حصوں پر مشتمل رہا۔ باب کے دونوں پاٹ ٹھوس لوہے کی بنیاد پر تیار کیے گئے مگران کی سطح پر لکڑی کا کام کیا گیا۔ لکڑی کے کام پر کشیدہ کاری کے ساتھ ساتھ اس پر سونے اور چاندی کے پانی کی قلعی کی گئی۔ علاوہ ازیں باب کے اطراف میں تتلی نما پھولوں کی کشیدہ کاری اور پیتل کی چھوٹی چھوٹی پٹیوں سے اسے سجایا گیا۔

باب کعبہ کا سامنے والا حصہ مستطیل شکل میں تیار کیا گیا جس کے بالائی حصے کو ایک مضبوط آرائشی بینڈ کے ذریعے گھیرا دیا گیا۔ اسے مزید خوبصورت بنانے کے لیے منحنی سروں والی شاخ جس کی چوٹی پر ایک دندانے دار پتا تیار کیا گیا کی شکل میں مزین کیا گیا اور اس کے اندر سات پتیوں والے پھول بوٹے بنائے گئے۔ اسی پیٹرن پر پوری بالائی پٹی تیار کی گئی۔

مستطیل اور بالائی سطح پرنصف دائرے کے شکل میں تیار کردہ باب کعبہ میں چار مستطیل شکلیں بنائیں گئیں جن میں مختلف عبارات تحریر کی گئیں۔ باب کعبہ کے تمام کونوں کو ایک ، دو ، تین اور پانچ پتوں والے پھولوں سے مزین کیا گیا۔

باب کعبہ کے سامنے والے بالائی حصے کے اوپر عربی گل کاری کی گئی۔ بالائی عقد کو مزید خوبصورت اور دلفریب بنانے کے لیے اس پرپیتل، سونے اور چاندی کے پانی کی ملمع کاری کی گئی۔ بالائی پٹی کے وسط میں سات پتیوں والےپھول جن کے درمیان ایک ستارہ بنایا گیا بنائے گئے۔ یوں باب کعبہ کی کل 20 پٹیوں کو اسی انداز میں تیار کیا گیا۔

ام القریٰ یونیورسٹی میں تاریخ واسلامی تہذیب وثقافت کے استاد ڈاکٹر ناصر بن علی الحارثی کے تفصیلی مضمون’شاہ عبدالعزیز کی مکہ مکرمہ میں تعمیراتی سرگرمیاں‘ میں باب کعبہ کی تیاری پربھی روشنی ڈالی گئی ہے۔ ڈاکٹر ناصر الحارثی لکھتے ہیں کہ باب کعبہ کے دائیں، بائیں اور بالائی حصے میں 114 ہیرے بھی جوڑے گئے۔ باب کعبہ کے دونوں پاٹوں کی موٹائی 9 سینٹی میٹر، پاٹوں کی سطح سے بلندی چھ سینٹی میٹر ہے۔باب کعبہ کے چار دستے اور دو تالے [قفل] ہیں۔ دو دستے گول شکل میں 9 سینٹی میٹر کے دائرے میں بنائے گئے ہیں جب کہ باب کعبہ کی بیس سطح زمین سے نو سینٹر مینٹر بلند ہے۔