.

کھلاڑی نے بھائی کی مدد کے لیے اپنی جیت قربان کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کھیل کے مقابلوں میں حصہ لینے والے ہر شخص کی پہلی اور آخری خواہش دوسروں کو پچھاڑ کر خود ہیرو بننا اور مقابلہ جیتا ہوتی ہے مگر میکسیکو میں دوڑ کے ایک مقابلے میں شامل ایک کھلاڑی نے مشکل میں پڑے بھائی کی مدد کر کے اپنی جیت اور ہیرو بننے کی قربانی دے کر منفرد مثال قائم کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق میکسیکو میں World Triathlon Series نامی چیمپئین شپ میں حصہ لینے والے کھلاڑی الیسٹرا براؤنلی نے طویل دوڑ کےبعد ہدف سے صرف چند میٹر دوری پراچانک جسم میں کمزوری محسوس کی۔ مقابلے میں شریک اس کے بڑے بھائی نے دیکھا کہ وہ موقع سے فائدہ اٹھا کرآگے بڑھ سکتا ہے مگر اس نے اپنی جیت کو بھائی کے لیے قربان کردیا۔ وہ فورا بھائی کی مدد کو پہنچا اور بیمار کھلاڑی نے بڑے بھائی کے کندھے پر ہاتھ رکھ کربقیہ فاصلہ طے کیا۔ اس موقع پر تماشائیوں کی طرف سے دونوں بھائیوں کے اس جذبے کی بھرپور داد دی گئی۔

اگرچہ مقابلے کے دوران کسی کھلاڑی کے دوسرے سے مدد لینے پر اعتراضات بھی کیے جاتے ہیں مگر میکسیکو میں ’’ٹریتھلن‘‘ نامی مقابلے میں مشکل حالات میں کسی بھی دوسرے فرد سے مدد لی جا سکتی۔ ٹریتھلن نامی مقابلے میں تیراکی، طویل فاصلے تک دوڑ لگانے اور موٹرسائیکل چلانے کے مقابلے منعقد کیے جاتے ہیں۔