.

مصر کے ساتھ سرحدی علاقے میں فائرنگ سے ایک اسرائیلی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کی سرحد کے ساتھ واقع اسرائیلی علاقے میں منگل کے روز فائرنگ سے ایک یہودی ہلاک ہوگیا ہے۔

اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں کہا ہے کہ فائرنگ کے اس واقعے کا بظاہر کسی جنگجویانہ کارروائی سے کوئی تعلق نہیں ہے۔اسرائیلی اور مصری فوج اس واقعے کی تحقیقات کررہی ہیں۔

اسرائیلی فوج کی خاتون ترجمان نے بتایا ہے کہ فائرنگ کا یہ واقعہ مصر کی سرحد کے ساتھ واقع نیگیف صحرا میں پیش آیا ہے۔اسرائیلی شخص فائرنگ سے شدید زخمی ہوگیا تھا۔اس کو ہیلی کاپٹر کے ذریعے ایک اسپتال میں منتقل کیا گیا تھا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لا کر دم توڑ گیا ہے۔

اسرائیل کے چینل 2 ٹیلی ویژن نے اطلاع دی ہے کہ مقتول اسرائیلی وزارت دفاع کے لیے خدمات انجام دینے والی ایک کنٹریکٹر فرم کا ملازم تھا۔یہ فرم سرحد پر نصب باڑ کی مرمت کا کام کررہی ہے۔

فوری طور پر یہ معلوم نہیں ہوسکا ہے کہ اس یہودی پر کس شخص نے فائرنگ کی ہے۔اسرائیل کی سرحد کے ساتھ واقع مصر کے شورش زدہ علاقے جزیرہ نما سیناء میں داعش سے وابستہ گروپ کے جنگجو سکیورٹی فورسز کے خلاف جنگ آزما ہیں اور وہ آئَے دن مصری فورسز پر حملے کرتے رہتے ہیں لیکن سرحدپار اسرائیلی علاقے کی جانب کم ہی فائرنگ کی گئی ہے۔