.

مریض کی سرجری کے دوران مصری ڈاکٹروں کی ہاتھا پائی

ڈاکٹروں کا ایک دوسرے پر آلات جراحی سے حملہ، دونوں گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ پولیس نے دو ڈاکٹروں کو حراست میں لے کر ان کے خلاف قانونی کارروائی شروع کی ہے۔ گرفتار کیے گئے دونوں ڈاکٹروں پر ایک مریض کی سرجری کے دوران آپس میں لڑنے اور ایک دوسرے پر آلات جراحی سے حملہ کرنے کا الزام عاید کیا گیا ہے۔

مصر کی شمالی گورنری البحیرہ سیکرٹری وزارت صحت ڈاکٹر علاء الدین عثمان نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ کو بتایا کہ پولیس کو بتایا گیا کہ شہر کے ایک بڑے اسپتال میں ایک مریض کی اپینڈیکس کی سرجری کے دوران دو ڈاکٹر کسی بات پرآپس میں الجھ پڑے۔ باتوں باتوں میں پیدا ہونے والی گرما گرمی آخر کار ہاتھا پائی تک جا پہنچی۔ ایک ڈاکٹر نے اپنے ہاتھ میں موجود آلات جراحی سے دوسرے پر حملہ کردیا جس کے نتیجے میں اس کے چہرے پر گہرے زخم آئے۔

ڈاکٹرعثمان نے کہا کہ ڈاکٹروں کا اپنی پیشہ وارانہ ذمہ داری کی انجام دہی کے بجائے ایک انتہائی حساس موقع پر آپس میں لڑنا سنگین جرم ہے اور اس کی سخت سے سخت سزا دی جائے گی۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ یہ واقعہ البحیرہ گورنری کے دوارالعام اسپتال میں ہفتے کے روز پیش آیا۔ دو ڈاکٹروں کی آپس میں لڑائی کے بعد موقع پر موجود دوسرے طبی عملے نے بیچ بچاؤ کیا۔