.

مراکش کی جماعت نے مصری ٹی وی کے فراڈ کا پھانڈا پھوڑ دیا

المولد چینل نے مراکش کے رکن پارلیمان الادریسی کو اپنے طور پر روحانی معالج بنا دیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مراکش کے عدل اور ترقی پارلیمان بلاک نے مصر کے ایک ٹیلی ویژن چینل کے خلاف شکایت دائر کی ہے اور کہا ہے کہ اس نے ایک جعلی پروگرام پیش کیا تھا جس میں اس کے ایک رکن پارلیمان کو روحانی معالج کے طور پر متعارف کرایا گیا ہے۔

مراکش کے اس پارلیمانی بلاک نے المولد ٹی وی چینل کے خلاف تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے اور اس سلسلے میں وزارت خارجہ کو باقاعدہ طور پر ایک تحریری درخواست پیش کردی ہے۔ العربیہ نیوز چینل کے نمائندے کے مطابق اس شکایت کا تعلق عدل اور ترقی پارلیمان بلاک کے رکن ابو زید المقریٰ الادریسی سے ہے۔

مراکش کی اس جماعت نے کہا ہے کہ مصر کے المولد ٹیلی ویژن چینل نے ایک شو کے دوران ادریسی کی تصویر استعمال کی تھی۔انھیں روحانی معالج کے طور پر متعارف کرایا تھا اور ان کے بارے میں ایسا مواد نشر کیا تھا جو فراڈ کے زمرے میں آتا ہے۔

چینل نے تین مصری فون نمبر بھی نشر کیے تھے تاکہ لوگ اپنے نفسیاتی ،ہیجانی ،جنسی ،مالی اور روحانی مسائل کے ازالے کے لیے ان نمبروں پر فون کر سکیں اور اپنے سوالوں کے جواب حاصل کرسکیں۔

مصری ٹیلی ویژن نے یہیں پر بس نہیں کیا بلکہ ایک پول کے نتائج بھی نشر کردیے جن میں یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ لوگ الادریسی کی خدمات سے مطمئن ہیں۔اس نے یہ بھی دعویٰ کیا ہے کہ الادریسی مختصر وقت کے لیے مصر میں آئے تھے اور ان کی نفسیاتی علاج کی تیکنیکوں سے سات ہزار سے افراد کے مسائل حل ہوئے ہیں۔

مراکشی جماعت نے اپنی شکایت میں مصری ٹی وی کے اس فراڈ کا یہ کہہ کر بھانڈا پھوڑ دیا ہے کہ الادریسی تو گذشتہ ساڑھے چار سال سے مصر گئے ہی نہیں ہیں۔یہ شکایت بلاک کے سربراہ سعد الدین عثمانی کے دستخطوں سے جمع کرائی گئی ہے۔اس میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ الادریسی تو لسانیات کے ماہر ہیں۔

مراکش کی وزارت خارجہ پر زوردیا گیا ہے کہ وہ اس معاملے میں فیصلہ کن انداز میں اقدام کرے اور مصری چینل سے اس ہتک آمیز حرکت کے ازالہ کے لیے کہا جائے اور اس سے معافی کا مطالبہ کیا جائے۔