.

مصری کاتب کا 700 میٹر لمبا قرآنی نسخہ تیار کرنے کا ریکارڈ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دنیا بھر میں قرآن پاک کے منفرد اور دیدہ زیب نسخے تیار کرنے کے لیے لوگ مختلف طریقے اختیار کرتے ہیں۔ مصر میں ایک کاتب نے اسلامی تاریخ میں قرآن پاک کا سب سے لمبا نسخہ تیار کرکے گینیز بک میں اپنا نام درج کرانے کی مہم شروع کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق مغربی گورنری کے بلقینا قصبے کے رہائشی سعد محمد حشیش جو پیشے کے اعتبار سے کپڑے کے تاجر بھی ہیں، نے تین سال قبل لمبے ترین قرآنی نسخے کی تیاری کا کام شروع کیا۔ وہ ہاتھ سے یہ نسخہ لکھ رہے ہیں۔

مجموعی طور پر ان کے قرآنی نسخے کی لمبائی 700 میٹر بتائی جاتی ہے جس کے آغاز میں اسماءالحسنیٰ اور سورتوں کی فہرست بھی شامل ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے حشیش نے کہا کہ اس نے تین سال قبل قرآن پاک کے مختلف رنگوں والے الفاظ پر مشتمل نسخہ تیار کرنے کا پلان بنایا۔ انہوں نے قرآنی آیات کی کتابت کے لیے عطریات تیار کرنے والوں سے مخلوط مواد حاصل کیا جس کی مختلف رنگوں میں روشنائی تیار کی گئی۔ اس سے قرآنی نسخے پر آنے والے اخراجات کم ہوگئے۔ تاہم وہ اپنے کپڑوں کی دکان سے جو کچھ کماتا رہا ہے وہ اس کا بیشتر حصہ قرآن پاک کے لمبے نسخے کی تیاری پر صرف کیا ہے۔ یہ نسخہ نہ صرف عرب ممالک بلکہ پوری دنیا کا منفرد صحیفہ ہے۔

ایک سوال کے جواب میں سعد محمد حشیش نے بتایا کہ وہ سنہ1996ء میں قرآن پاک کا ایک نسخہ پہلے بھی لکھ چکے ہیں۔ وہ نسخہ بھی تین سال میں مکمل کیا گیا تھا۔ حشیش نے کہا کہ قرآن پاک کی کتابت انتہائی باریکی اور احتیاط کا کام ہے جس میں معمولی غلطی کی گنجائش بھی نہیں ہوتی۔

اس نے کہا کہ مجھے فخرہے کہ میں قرآن پاک کا ایک ایسا نسخہ تیار کررہا ہوں جو اب تک کوئی نہیں کرسکا مگر یہ سب اللہ کی توفیق اور اس کی عطاء کا نتیجہ ہے۔

حشیش اس سے قبل اسی طریقے پر کئی کتابیں بھی لکھ چکا ہے لمبائی میں دوسری کتابوں سے کہیں بڑی ہیں۔