.

مسجد نبوی میں تعینات سیکیورٹی فورس کیسے نمازیوں کی خدمت کرتی ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مسجد نبوی اور روضہ رسول صلی اللہ وعلیہ وسلم پر حاضر کا شرف حاصل کرنے والے اہل ایمان کو وہاں پر عبادت وریاضت کے لیے جس سکون اور اطمینان کی ضرورت ہوتی ہے اس کی اہمیت سے انکار ممکن نہیں۔

مسجد نبوی میں زائرین کو ہرطرح کی سیکیورٹی فراہم کرنے اور انہیں روحانی اطمینان پہنچانے کے لیے قانون نافذ کرنے والے اداروں کے کردار کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ مسجد نبوی سیکیورٹی کی ذمہ داریاں نھبانے میں مصروف فورس کے ڈپٹی چیف کیپٹن عبد اللہ عاید لحربی نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مسجد نبوی میں تعینات محافظ فورس کے تمام اہلکار پوری تند دہی کے ساتھ زائرین کے روحانی آرام و سکون کے لیے ہرطرح کے حالات میں جا نفشانی سے کام کرتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی حکام کی ذمہ داری زائرین کو ہر تحفظ فراہم کرنا اور انہیں کی مکمل رہنمائی کرنا ہوتا ہے۔ محافظ فورسز کے اہلکار دوسرے اداروں کی قائم کردہ ٹیموں کےساتھ تعاون کرتے ہوئے اپنی ذمہ داریاں کما حقہ ادا کرتے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں کیپٹن الحربی کاکہنا تھا کہ ماہ صیام اور اور حج کے مواقع پر زائرین کی تعداد میں اضافے کے پیش نظر سیکیورٹی حکام کی مصروفیات بڑھ جاتی ہیں۔ مسجد نبوی میں تعینات کیے گئے تمام اہلکاروں کو خصوصی تربیت کے مختلف مراحل سے گذرا جاتا ہے اور ان میں زائرین روضہ رسول کی خدمت کا جذبہ اجاگر کرنے کے بعد انہیں وہاں پر ذمہ داری سونپی جاتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مسجد نبوی کے اندر اور باہر سیکیورٹی کے فرائض انجام دینے والے اہلکاروں کی تعداد 1500 سے زیادہ ہے۔