.

امریکا میں 100 سالہ سب سے بوڑھے قیدی کی رہائی

جون فرانسیزی کی آدھی زندگی جیلوں میں بیت گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی ذرائع ابلاغ کے مطابق حکام نے کولومبو نامی خاندان کے سربراہ جون سونی فرانسیزی کو قید کی مدت پوری ہونے کے بعد ریاست ماسی چیوسٹس میں قائم جیل کی اسپتال سے رہا کردیا ہے۔ مسٹر فرانسیزی امریکا میں جرائم پیشہ مافیا سے تعلق رکھنے والا سب سے قدیم قیدی سمجھا جاتا ہے جس کی عمر اب ایک سو سال ہوچکی ہے۔

اخبار ’نیوز ڈے‘ کے مطابق فرانسیزی کو کئی بار امریکی پولیس نے گرفتار کیا۔ اس نے اپنی زندگی کا بیشتر حصہ جیل کی سلاخوں کے پیچھے گذرا۔ اس دوران اس کی چھ بار مشروط رہائی بھی عمل میں لائی گئی۔

فرانسیزی کے خلاف آخری عدالتی فیصلہ اس کی 93 سال کی عمر میں 2010ء میں بلیک میلنگ کی ایک سازش میں ملوث ہونے کے الزام میں سنایا گیا تھا۔

گذشتہ کئی دہائیوں کے دوران بار بار گرفتاریوں اور جیلوں میں قید کاٹتے ہوئے فرانسیزی کو کئی مقدمات میں بری بھی کیا گیا۔ سنہ 1967ء میں سے ایک بنک میں ڈکیتی کے جرم میں 50 سال قید کی سزا سنائی گئی۔ وہ اپنی اس سزا کا بیشتر عرصہ جیل میں گذارنے کے بعد رہا ہوگیا تھا۔

جب فرانسیزی کو یہ سزا سنائی گئی تو اس کی اہلیہ کریسٹینا نے ’نیویارک ڈیلی نیوز‘ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میں اس وقت بہت بڑے صدمے کا شکار ہوں گی جب میرے شوہر کی سزا پوری ہوگی تو اس کی عمر ایک سو سال ہوچکی ہوگی۔

آج فرانسیزی کے بیٹے مائیکل نے ’ٹویٹر‘ پر تبصرہ کرتے ہوئے ٹویٹ کیا کہ میرے والد کو 100 سال کی عمرمیں جیل سے رہا کیا گیا ہے۔ خدا کا شکر ہے آج کے بعد وہ آزاد ہے‘۔