.

مغربی کنارے میں فلسطینیوں کے چاقو حملے: تین اسرائیلی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اسرائیل کی افواج اور فلسطینوں کے درمیان مقبوضہ مشرقی بیت المقدس اور مغربی کنارے میں جھڑپوں کے بعد چاقو زنی کے واقعات میں تین اسرائیل شہری ہلاک ہو گئے ہیں۔

مقبوضہ مغربی کنارے میں رام اللہ کے قریب ایک النبی صالح بستی میں تین اسرائیلی شہریوں کو چاقو مار کر ہلاک کر دیا گیا۔اس کے علاوہ ایک اور اسرائیلی شہری پر حلامیش میں حملہ ہوا ہے۔ اسرائیلی فوج کا کہنا ہے کہ حملہ آور کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ مقبوضہ بیت المقدس کے مقدس مقام پر نئے سکیورٹی انتظامات کیے جانے پر اسرائیلی فوج کے ساتھ فلسطینیوں کی جھڑپوں کے بعد یہ حملہ ہوا ہے۔مشرقی بیت المقدس اور مغربی کنارے میں ہونے والی ان جھڑپوں میں تین فلسطینی جاں بحق اور سینکڑوں افراد زخمی ہو گئے ہیں۔

ادھر فلسطین کے صدر محمود عباس نے کہا ہے کہ وہ حرم الشریف میں میٹل ڈیٹکٹر لگائے جانے کے بعد اسرائیل کے ساتھ اپنے تمام رابطے ختم کر رہے ہیں۔ اسرائیل کا کہنا ہے کہ ایک ہفتہ قبل دو اسرائیلی پولیس اہلکاروں کی ہلاکت کے بعد مزید سکیورٹی کی ضرورت محسوس کی گئی ہے۔

اسرائیلی فوج نے بتایا کہ حلامیش میں 'جمعہ کو چار اسرائیلوں کو چاقو مارا گیا جب ایک شخص ایک نجی گھر میں گھس آیا۔' اسرائیلی میڈیا کا کہنا ہے کہ مرنے والے میں دو مرد اور ایک خاتون ہیں۔

اسرائیلی فوج نے بتایا کہ حملہ آور ایک فلسطینی نوجوان عمر العابد ہے جسے ہسپتال لے جایا گيا ہے اور اس کی حالت کے بارے میں کچھ واضح نہیں ہے۔اس سے قبل اسرائیل کی افواج اور فلسطینوں کے درمیان مشرقی بیت المقدس اور مغربی کنارے میں جھڑپیں ہوئی تھیں۔