.

مصر میں برگر کی قیمت 1500 پاؤنڈ، راز کیا ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصرمیں ایک سینڈوچ [برگر] کا کافی شہرہ ہے۔ اڑھائی سو گرام وزنی برگر کی قیمت مصری کرنسی میں پندرہ سو پاؤنڈ ہے۔ اس برگر میں ایسی کیا خاص بات ہے جس کی وجہ سے اس کی قیمت ڈیڑھ ہزار پاؤنڈ تک وصول کی جاتی ہے۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ نے ایک رپورٹ میں اس سوال کا جواب دیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوشل میڈیا پر غیر معمولی شہرت حاصل کرنے والے مہنگے ترین برگر خوب چرچا ہے۔ مگر اس کی قیمت کی وجہ سے سوشل میڈیا پر یہ وجہ نزاع بھی بنا ہوا ہے۔

اس برگر کی تیاری میں جاپان میں خصوصی ماحول میں پالی گئی گائے کا گوشت استعمال کیا جاتا ہے۔ اس گائے کے گوشت کی خاص بات یہ ہے کہ اس میں چربی اور چکنائی کی مقدار بہت کم ہے۔ اس نوعیت کی گائے اور اس کا بیف مارکیٹ میں تقریبا نایاب ہے۔

مصر میں جاپانی گائے کے گوشت سے سینڈوچ تیار کرنے والے ہوٹل کی جانب سے سوشل میڈیا پر ایک تصویر بھی پوسٹ کی ہے۔ ساتھ ہی اس کے خواص اور قیمت بھی بیان کی گئی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ برگر کی تیاری میں استعمال ہونے والی گائے کے گوشت کی وجہ سے اس کی قیمت بہت بڑھ جاتی ہے۔ یہ گوشت دنیا میں بہت مہنگا فروخت ہوتا ہے۔ جس گائے کا گوشت استعمال کیا جاتا ہے اسے جاپان میں خاص معمول میں پرورش کے عمل سے گذارات جاتا ہے۔ گائے کی پرورش کے دوران اسے سرخ نبیذ پلائی جاتی ہے جو گوشت میں ہضم کرنے والے خواص کو بہتر بناتی ہے۔ اس کے علاوہ ذبح کرنے سے قبل گائے کا ایک خاص مساج کیا جاتا اور اسے ہلکی پھلکی موسیقی بھی سنائی جاتی ہے۔

ایک بند کے [برگر] کے دو ٹکڑوں کے درمیان رکھے گئے دیگر مواد میں 50 گرام سیاہ مشروم اور دیگر انتہائی معیاری اشیاء شامل کی جاتی ہیں۔ سینڈوچ کی غیرمعمولی قیمت پر سوشل میڈیا پر ہوٹل کو سخت تنقید کا بھی سامنا ہے۔

ناقدین کا کہنا ہے کہ ایسے لگتا ہے کہ پندرہ سو پاؤنڈ میں برگر گروخت کرنے والا ہوٹل مصر میں نہیں بلکہ کسی امیر ترین ملک میں قائم ہے۔ برگر کی جتنی قیمت ہے اتنی یہاں ملازمین کی ماہانہ تنخواہ بھی نہیں ہوتی۔

کرنسی کے موجودہ نرخوں کے مطابق ایک مصری پاؤنڈ قریبا پاکستانی چھ روپے کے برابر ہے۔ اس طرح اس برگر کی قیمت نو ہزار روپے تک بنتی ہے۔