.

عرب دنیا کی ملکہ ترنم کی خفیہ شادی سے تین بچوں کی پیدائش

’ام کلثوم کی خفیہ شادی سے تین بچوں والی خبر پر مصری حیران‘

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر کے ایک مقبول عام نیوز پورٹل ’البوابہ‘ کی ایک خبر نے مصری شہریوں کو ورطہ حیرت میں ڈال دیا ہے۔ حیران کن خبر کے مطابق عرب دنیا کی ملکہ ترنم مصری گلوکارہ مرحومہ ام کلثوم کے بارے میں ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ انہوں نے ایک جج سے خفیہ شادی رچا رکھی تھی جس سے اس کے تین بچے بھی تھے۔

حال ہی میں مصری پورٹل ’البوابہ‘ نے ناول نگار ومصنف محفوظ عبدالرحمان کا ایک انٹرویو شائع کیا۔ اس انٹرویو میں انہوں نے یہ دھماکہ خیز انکشاف کیا کہ ام کلثوم نے ایک جج صاحب سے خفیہ شادی کی تھی جس سے اس کے تین بچے بھی ہوئے۔ محفوظ عبدالرحمان کا یہ بیان ان سے انٹرویو لینے والے صحافی شادی اسعد کے پاس ریکارڈنگ کی شکل میں موجود ہے۔ محفوظ عبدالرحمان نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ ام کلثوم کی خفیہ شادی سے ہونے والے تین بچوں میں دماغی طور پر معذور ایک بچی بھی شامل ہے۔

ام کلثوم کی خفیہ شادی کی خبر کی اشاعت کے بعد مصری پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا حرکت میں آ گیا ہے۔ کئی ٹی وی چینلوں نے انٹرویو نگار صحافی شادی اسعد سے اس خبر کی تصدیق کے لیے رابطہ کیا۔ انہوں نے اس خبر کی صحت کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ ان کے پاس محفوظ عبدالرحمان کا یہ دعویٰ ریکارڈنگ کی شکل میں موجود ہے جسے کوئی چیلنج نہیں کرسکتا۔

مصری ٹی وی چینل نے ’کوکب شرق‘ یعنی مشرق کا ستارہ کہلوانے والی ام کلثوم کی پوتی مسز بثنیہ محمد سے بھی رابطہ کیا تاہم انہوں نے ام کلثوم کی خفیہ شادی اور اس سے تین بچوں کی پیدائش کی خبر کی تردید کی ہے۔

حیران کن بات یہ ہے کہ محفوظ عبدالرحمان کی اپنی بیوہ اور فن کارہ سمیرہ عبدالعزیز اپنے شوہر کے بیان کی تردید کررہی ہیں۔ انہوں نے تو ام کلثوم کی خفیہ شادی والی خبر شائع کرنے پر اخبار ’البوابہ‘ اور صحافی شادی اسعد کے خلاف ہرجانے کا نوٹس بھجوانے کی بھی دھمکی دی ہے۔ جواب میں صحافی اسعد کا کہنا ہے کہ وہ فن اور فنکاروں کا احترام کرتے ہیں۔ انہوں نے یہ خبر اسی لیے روکے رکھی کیونکہ محفوظ عبدالرحمان نے اپنے انٹرویو میں انہیں تاکید کی تھی ام کلثوم کی خفیہ شادی اور تین بچوں والی خبر کو ان کی زندگی میں شائع نہ کرنا۔

البوابہ نے بھی عرب دنیا کی ’ملکہ ترنم‘ ام کلثوم کی خفیہ شادی والی خبر کی وضاحت کی ہے اور کہا ہے کہ ام کلثوم نے ’وجدان‘ نامی جج کے ساتھ شادی کی تھی جس سے ان کے تین بچے تھے۔ ان میں سے ایک ذہنی مریضہ بچی کا نام سعدیہ تھا۔