جمرات پر ماری جانے والی کنکریاں کہاں جاتی ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

منی میں کنکریوں سے خلاصی حاصل کرنے کی کارروائی ایک خود کار عمل ہے جو جمرات پل کے تہہ خانے میں 15 میٹر کی گہرائی پر واقع ہوتا ہے۔ حجاج کی جانب سے جمرات کے تین حوضوں میں کنکریاں پھینکے جانے کے بعد 3 خودکار conveyor system کے ذریعے ان تمام کنکریوں کو جمع کر لیا جاتا ہے۔

اس کے بعد کنکریوں کے چھانٹے جانے اور علاحدہ کیے جانے کی کارروائی عمل میں آتی ہے اور پھر ان کنکریوں کو کچرا شمار کر کے مقررہ مقامات پر ٹھکانے لگا دیا جاتا ہے۔ سرکاری اندازے کے مطابق سالانہ تقریبا 1000 ٹن کنکریوں سے چھٹکارہ حاصل کیا جاتا ہے۔

یہ پورا نظام جمرات کے پل کی مخلتف منزلوں پر نصب برقی پھاٹکوں کو کھولے اور بند کیے جانے کے ذریعے کام کرتا ہے اور اس طرح ان کنکریوں کو منتقلی کے لیے مقررہ لاریوں تک پہنچایا جاتا ہے۔

"العربیہ" نیوز چینل نے کچھ عرصہ قبل اس پورے عمل کی عکس بندی کی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں