.

انسانی تاریخ میں پہلی بار فضاء میں معلق ’فائیو اسٹار‘ ہوٹل کا تصور!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

دولت مند لوگوں کے شوق بھی انوکھے ہوتے ہیں۔ زمین پر فائیو اسٹار سہولیات سے لطف اندوز ہونے کے بعد اب ان کے لیے فضاء میں معلق ہوٹلوں اور قیام گاہوں کی بھی تیاری پر کام شروع کر دیا گیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق فضاء میں معلق ’فائیو اسٹار ہوٹل‘ کا آئیڈیا سنگاپور کی ایک فضائی کمپنی نے دیا ہے۔ کمپنی کی جانب سے دنیا بھرکی فرموں کو دعوت دی گئی ہے کہ وہ اس ناممکن کو ممکن کر دکھانے کے لیے آگے آئیں۔ مختلف کمپنیوں کی طرف سے اس ناممکن کو ممکن بنانے کے مقابلے کی کیفیت کا امکان موجود ہے۔

بنیادی طور پر فضاء میں معلق پنچ ستارہ ہوٹل کا تصور سنگاپور کی ایک فضائی کمپنی نے پیش کیا۔ کمپنی کی طرف سے ایک ایسے ہوٹل نما وسیع وعریض کمرے کا تصور پیش کیا جس میں فائیو اسٹار ہوٹل کی سہولیات ہوں گی مگر اس کی اضافی خوبی یہ ہوگی کہ وہ زمین پر کسی سہارے کے ساتھ نہیں بلکہ فضاء میں معلق ہوگا۔ اس تخیل کے تحت فضاء میں معلق فائیو اسٹار ہوٹل کا حجم فرانسیسی مال بردار طیارے’ائیر بس A380 ‘کے برابر ہوگا۔ خیال رہے کہ A380 نامی مال برادر جہاز دنیا میں اپنی نوعیت کا سب سے بڑا طیارہ ہے۔

سینگا پور ایئرلائن کے انکشاف کے مطابق مجوزہ خلائی ہوٹل میں ڈبل لگژری فیملی روم، الماریاں، غسل خانہ اور دیگر ضروری سہولیات موجود ہوں گی۔ یہ فائیو اسٹار ہوٹل ایک جہاز کے ساتھ جوڑاجائے گا۔ مسافر اسے ایک ہوٹل ہی کے طور پر استعمال کرسکیں گے۔ یہ خلائی فائیو اسٹار ہوٹل کرائے پر بک کرایا جاسکے گا۔

کمپنی کا کہنا ہے کہ کامرس کلاس کے مسافر بھی اڑتے فائیو اسٹار ہوٹل سے استفادہ کرسکیں گے۔ شاید تجرباتی طور پر یہ سہولت سنگاپور سے آسٹریلیا کے شہر سڈنی جانے والے مسافروں کو فراہم کی جاسکے۔

خلا میں معلق فائیو اسٹار ہوٹل کے مجموعی طور پر چھ کمرے تجویز کیے گئے۔ ان میں ڈبل بیڈ روم ان مسافروں کے لیے ہوں گے جو جوڑے کی شکل میں سفر کررہے ہوں۔ کمروں میں میز، کرسی، بیڈ، الماری، ٹیلی ویژن اور اٹلی کے پرتعیش امپورٹڈ قالین بچھائے جائیں گے۔

ہوٹل کے اندر ایسی فولڈنگ کرسیاں بھی رکھی جائیں گی جو ان کمروں میں آنے والے خاندان یا گروپ کی شکل میں قیام کرنے والے افراد کے کام آئیں گی۔ مجموعی طور پر جہاز میں 78 سیٹیں تیار کی جائیں گی مگر حسب ضرورت ان سیٹوں کو بیڈ بھی بنایا جاسکے گاْ۔ ایک بیڈ کی لمبائی 78 اینچ اور چوڑائی 25 انچ ہوگی جب کہ کمرے میں 32 اینچ ٹی وی اسکرین بھی لگائی جائے گی۔