.

اسمارٹ ہائی ٹیک سُوٹ کیس جو کبھی نہیں کھوتے.. لیکن !

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

کئی ماہ پہلے ٹکنالوجی اور صنعت کی دنیا میں ہونے والی پیش رفت کے نتیجے میں ایسے اسمارٹ سُوٹ کیس اور رول آن بیگز کی تیاری کی نوید سنائی گئی تھی جو ہوائی اڈّے پر ہر جگہ خود سے آپ کے پیچھے چلیں گے۔ دوسرے لفظوں میں کہا جا سکتا ہے کہ "آپ ان سے کسی طور ہاتھ نہیں دھو سکتے"۔ دنیا بھر میں سوٹ کیس اور بیگز کا کھونا بہت سے مسافروں کے لیے سب سے بڑا دردِ سر ہوتا ہے۔

تاہم حقیقت کا رُوپ دھارنے والا یہ خواب لگتا ہے کہ اتنی آسانی سے پورا نہیں ہو سکے گا۔ اس کی وجہ مذکورہ سوٹ کیسوں میں استعمال ہونے والی "بیٹری" ہے جو طیارے اور مسافروں کے لیے خطرہ بن سکتی ہے۔ یہ بیٹریاں "لیتھیئم آئن" پر مشتمل ہوتی ہیں ، یہ وہ ہی عنصر ہے جو اسمارٹ فون اور لیپ ٹاپ کی بیٹریوں میں موجود ہوتا ہے۔

عام طور پر فضائی کمپنیاں مسافروں کو کارگو سیکشن میں لیتھیئم بیٹریاں لے جانے کی اجازت نہیں دیتی ہیں۔

اس سلسلے میں American Airlines فضائی کمپنی کے ترجمان نے جمعے کے روز امریکی اخبار نیویارک ٹائمز کو دیے گئے بیان میں انکشاف کیا کہ 15 جنوری 2018 سے اُن کی فضائی کمپنی وہ پہلی بڑی ایئر لائنز ہو گی جو مسافروں کے اسمارٹ ہائی ٹیک سوٹ کیسوں کے چیک اِن پر پابندی پر پابندی عائد کر دے گی۔ لیتھیئم بیٹریوں کے جہاز تک لے جانے کی صورت میں مسافر اس کو صرف Hand Carry سامان میں ہی اپنے ساتھ لے جا سکیں گے۔

لہذا اب اسمارٹ ہائی ٹیک سوٹ کیس خریدنے سے پہلے اس بات کا اطمینان کر لیں کہ اُس کی بیٹری نکل کر علاحدہ کی جا سکتی ہے ورنہ دوسری صورت میں آپ سفر میں اس سُوٹ کیس کو اپنے ہمراہ نہیں لے جا سکیں گے۔