.

بین البراعظمی سفر کرنے والے اختلافِ اوقات سے خبردار رہیں !

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اگر آپ مختلف برّاعظموں کے درمیان سفر کے عادی ہیں تو خبردار رہیے ! اس طرح آپ کے سرطان میں مبتلا ہونے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں۔

برطانوی اخبار ڈیلی میل کے مطابق ایک نئی طبی تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ انسانی جسم میں خلیوں کی بڑھوتری کو کنٹرول کرنے والا پروٹین ہی جسم کے اندر داخلی حیاتیاتی گھڑیوں کو بھی کنٹرول کرتا ہے۔

اس تحقیق کی مرکزی مؤلفہ برلن میں Charité-Medical University سے تعلق رکھنے ڈاکٹر اینگلا ریلوگیو ہیں۔ اُن کے مطابق تحقیق کے نتائج سے یہ بات سامنے آتی ہے کہ غالبا حیاتیاتی گھڑی انسانی جسم میں ٹیومر کو دبانے کے طور پر کام کرتی ہے۔ ڈاکٹر اینگلا کا مزید کہنا ہے کہ " ہماری اندرونی گھڑی بیرونی روشنی اور سخت تاریکی کے ساتھ عین مطابقت رکھتی ہے اور یہ انسانی برتاؤ اور سرگرمیوں کی سطح کو بھی کنٹرول کرتی ہے"۔

برطانیہ میں ہر دو منٹ میں سرطان کے ایک نئے مریض کی تشخیص ہوتی ہے۔ ان میں چھاتی ، پروسٹیٹ ، پھیپھڑوں اور آنتوں کے سرطان کا تناسب سرطان کے مجموعی مریضوں کا پچاس فی صد ہوتا ہے۔

محققین نےRAS کے نام سے معروف پروٹین کا تجزیہ کیا جو چوہے کے اندر سرطانی خلیے کے ایک چوتھائی حصّے میں غیرمتوازن طور پر سرگرم رہتا ہے۔ اس کے علاوہ دو مزید پروٹینز کی چھان بین کی گئی جو سرطان کو دبانے کے حوالے سے جانے جاتے ہیں۔ یہ دو پروٹینزINK4a اور ARF کہلاتے ہیں۔ طبی جرنل "PLOS Biology"میں شائع ہونے والی تحقیق کے نتائج کے مطابق غالبا حیاتیاتی گھڑی انسانی جسم میں ٹیومر کو دبانے کے طور پر کام کرتی ہے۔ نتائج سے یہ بھی انکشاف ہوا ہے کہ انسانی جسم میں خلیوں کی بڑھوتری کو کنٹرول کرنے والا پروٹین RAS ہی جسم کے اندر داخلی حیاتیاتی گھڑیوں کو بھی کنٹرول کرتا ہے۔

محققین کے مطابق ان کی تحقیق کے نتائج انسانی جسم کی اندرونی گھڑی کے.. خلیوں کی بڑھوتری اور ان میں سرطان کو روکنے کی صلاحیت پر اثرات کو نمایاں کرتے ہیں۔