.

سعودی عرب میں نصف خواتین کس عمر میں بیاہی جاتی ہیں؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے محکمہ شماریات (جنرل اتھارٹی برائے شماریات) نے آبادی اور مختلف سماجی اور اقتصادی خصوصیات سے متعلق اہم اور دلچسپ اعداد وشمار جاری کیے ہیں۔ان میں سب سے دلچسپ سعودی مرد وخواتین کی شادی کی عمروں سے متعلق ہیں۔ان کے مطابق سعودی مردوں کی شادی کرنے کی اوسط عمر 25 سال اور 3 ماہ ہے جبکہ خواتین پہلی مرتبہ 20 سال چار ماہ کی عمر میں بیاہی جاتی ہیں۔

اس سروے کے نتائج کے مطابق جن خواتین کی اوائل عمر ی یا 20 سال سے کم عمر میں شادی ہوجا تی ہے، ان کی شرح 46 فی صد ہے۔ان میں وہ خواتین بھی شامل ہیں جو اس وقت شادی شدہ ہیں ، طلاق یافتہ ہیں یا بیوائیں ہیں۔

اعداد وشمار کے مطابق ہر 100 شادی شدہ خواتین میں سے 46 فی صد کی شادی 20 سال سے کم عمر میں ہوئی تھی۔دوسری جانب سروے یہ بھی بتاتا ہے کہ جب ایک سعودی عورت کی عمر 32 سال کو پہنچ جاتی ہے تو اس کی شادی ہونے کے امکانات بہت کم رہ جاتے ہیں۔32 سال کی عمر کی کنواری خواتین کی تعداد 2.95 فی صد ہے۔

سروے کے نتائج کے مطابق سعودی عرب میں غیر شادی خواتین کی شرح کا تناسب 10.3 فی صد ہے۔اس کا یہ مطلب ہے کہ 15 یا اس سے زیادہ عمر کی ہر 10لڑکیوں یا عورتوں میں سے ایک ایسی ہوتی ہے جو 32 سال کی عمر کو پہنچ جاتی ہےمگر اس کی شادی نہیں ہوتی اور وہ کنواری ہی رہ جاتی ہے۔

محکمہ شماریات کے جاری کردہ سابقہ اعداد و شمار میں بتایا گیا تھا کہ 15 سال یا اس سے زیادہ عمر کی قریباً 22 لاکھ چالیس ہزار سعودی خواتین میں سے قریباً 2 لاکھ ساڑھے 30 ہزار کی کبھی شادی نہیں ہوئی تھی اور وہ کنواری ہی رہ گئی تھیں۔