.

روسی خاتون سینیٹر کے بالوں کا منفرد انداز!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

بعض نامور سیاسی، سماجی یا شوبز کی خواتین اپنے سرکے بالوں کی وجہ سے میڈیا کی توجہ کا مرکز رہتی ہیں۔ انہی میں ایک روسی خاتون سینیٹر بھی ہیں جو انے عجیب وغریب بالوں کی وجہ سے کافی مشہور ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ مجھے اپنے نرالے بالوں پر فخر ہے مگر میں ان کے بارے میں سوالات سن سن کر تھک گئی ہوں۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے بھی مسز فالنٹینا بیٹرنکو کی شخصیت، سراپے بالخصوص ان کے سر کے بالوں کے حوالے سے جاری بحث میں حصہ ڈالا ہے۔ ان کے بال دیکھنے میں کسی گاڑی کا کور لگتے ہیں۔ سوشل میڈیا پر بھی ان کے دلفریب بالوں چرچے ہیں۔

سنہ 2015ء کو روس کے ایک مقامی ریڈٰیو کو دیے گئے انٹرویو میں مسز بیٹرنکو نے کہا کہ مجھے اپنے بالوں کے حوالے سے فخر ہے مگر میں ان کے بارے میں سوالات سن سن کر تھک گئی ہوں۔ میں اپنے بالوں کو چوٹی سے پنوں کے ساتھ باندھ دیتی ہوں۔

بعض لوگ بیٹرنکو کے بالوں اور شخصیت پر تبصرہ کرتے ہوئے انہیں فلم سیریز اوسٹن پاورز کے ڈاکٹر ایفل کے فرضی کردار سے تشبیہ دیتے ہیں مگر حقیقی معنوں میں وہ ایک ہیرو ہیں جنہوں نے سنہ 1993ء میں روسٹوو میں ایک مسلح گروپ کے ہاتھوں یرغمال بنائے گئے بچوں کو بازیاب کرانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

’نیوز ویک‘ میگزین سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اسکول کے بچوں اور ان کے اساتذہ کو اغواء کرنے والے مسلح گروپ کے ساتھ بات چیت کرنے اور کامیابی سے یرغمالیوں کو بازیاب کرانے پرتمغہ شجاعت سے نوازا گیا۔ مسلح گروپ نے یرغمالیوں کو بارودی مواد سے بھرے ایک ہیلی کاپٹرکے اندر بند کر رکھا تھا اور ان کی زندگیاں خطرے میں تھیں۔

پیٹرنکو کی زیرنگرانی مسلح گروپ کے ساتھ کئی روز تک جاری رہنے والے کامیاب مذاکرات کے بعد گروپ کو ہیلی کاپٹر اور 10 ملین ڈالر کی نقد رقم دینے کے بعد یرغمالیوں کورہا کرایا گیا تھا۔

اس کارروائی کے بعد اغواء کاروں کو بھی گرفتار کرلیا گیا تھا۔ کارروائی میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا۔