کینیڈا: بیلجیئم کے بادشاہ کے استقبال کے موقع پر سفارتی پروٹوکول کی غلطی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

بیلجیئم کے بادشاہ فلپ اور ان کی بیگم ملکہ میتھلڈ کے کے کینیڈا کے دورے کے دوران پیر کو اوٹاوا میں ایک سرکاری تقریب کے منتظمین سے ایک بھونڈی حرکت کا ارتکاب ہو گیا۔ ہوا یہ کہ مہمان شاہی جوڑے کے استقبال کے موقع پر منتظمین نے بیلجیئم کے بجائے جرمنی کا پرچم بلند کر دیا۔ تاہم جلد ہی انہیں اپنی غلطی کا احساس ہوا اور مہمانوں کی آمد سے قبل اسے درست کر دیا گیا۔

یہ واقعہ کینیڈا کی گورنر جنرل جولی پائیٹ کی قیام گاہ کے باغ میں پیش آیا۔ جولی پائیٹ کو برطانوی ملکہ الزبتھ دوم کی نمائندہ شمار کیا جاتا ہے۔ ملکہ الزبتھ کینیڈا کی اعزازی سربراہ ہیں۔

واضح رہے کہ بیلجیئم اور جرمنی کے پرچموں میں تین رنگ زرد، سرخ اور سیاہ ایک جیسے ہیں۔ تاہم جرمنی کے پرچم میں تین اُفقی لائنیں (سیاہ پھر سرخ پھر زرد) ہیں جب کہ بیلجیئم کا پرچم تین عمودی لائنوں (سیاہ پھر زرد پھر سرخ) پر مشتمل ہے۔

کینیڈا کی گورنر جنرل کی ترجمان میری ایف لیٹورنو کے مطابق "شاہ فلپ اور ملکہ میتھلڈ کے پہنچنے سے قبل غلطی کو درست کر دیا گیا"۔

بیلجیئم کے شاہی جوڑے نے کینیڈا کے سرکاری دورے کا آغاز پیر کے روز کیا اور یہ دورہ ایک ہفتہ جاری رہے گا۔ دورے میں شاہی جوڑے کے ساتھ بیلجیئم کا ایک وفد بھی آیا ہے جس میں وزراء ، تاجر حضرات اور فن کار شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں