.

سعودی عرب: عمرہ زائرین کو کسی بھی شہر میں جانے کی اجازت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کی حکومت نے بیرون ملک سے آنے والے عازمین عمرہ اور دوسرے زائرین کو اپنے تیس روزہ ویزے کے دوران میں کسی بھی شہر میں جانے کی اجازت دے دی ہے۔البتہ انھیں اپنی اس ایک ماہ کی مدت میں سے پندرہ دن مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ میں گزارنا ہوں گے۔

وزارت حج اور عمرہ امور کے انڈر سیکریٹری عبدالعزیز وزان نے بتایا ہے کہ گذشتہ ایک ہفتے کے دوران میں دنیا بھر سے ایک ہزار سے زیادہ زائرین عمرہ کی مملکت میں آمد ہوئی ہے اور گذشتہ چار روز میں عمر ے کے 25 ہزار سے زیادہ ویزے جاری کیے گئے ہیں۔

سعودی روزنامے "الیوم" کی رپورٹ کے مطابق انھوں نے اس سال عمرہ کے زائرین کو دی جانے والی اضافی سہولتوں کی تصدیق کی ہے اور بتایا ہے کہ سعودی عرب سے باہر سے آنے والے عمرہ زائرین کو 30 دن کے لیے ویزے جاری کیے جارہے ہیں۔وہ اس دوران میں کسی بھی سعودی شہر میں جاسکتے ہیں ۔البتہ انھیں ان میں سے پندرہ دن الحرمین الشریفین (مسجد الحرام اور مسجد النبوی) میں گزارنا ہوں گے۔

عبدالعزیز وزان نے اس توقع کا اظہار کیا ہے کہ اس سال عازمین عمرہ کی تعداد پچاسی لاکھ تک پہنچ جائے گی اور عمرہ سیزن شوال المکرم کے اختتام تک جاری رہے گا۔گذشتہ سال کے دوران میں عمرہ کے لیے سعودی عرب آنے والے عازمین کی تعداد ستر لاکھ سے کچھ زیادہ رہی تھی۔

سعودی عرب کے فراہم کردہ سرکاری اعداد وشمار کے مطابق مناسکِ حج کی ادائی کے بعد مدینہ منورہ میں آنے والے زائرین کی تعداد 770704 تک پہنچ گئی ہے۔ مدینہ میں حج کمیٹی کے یونٹ برائے میڈیا اور سوشل کمیونیکشن نے بتایا ہے کہ اس وقت مدینہ منورہ میں مقیم زائرین کی تعداد 175878 ہے۔