.

مسلم خاتون جاسوس کی تصویر برطانیہ میں سب سے بڑے کرنسی نوٹ پر سج سکتی ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

برطانیہ 2020ء میں پچاس پاؤنڈ کا پلاسٹک کا کرنسی نوٹ جاری کرنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ اس سلسلے میں بینک آف انگلینڈ نے ابھی سے اس کی تیاری شروع کر دی ہے۔ یہ پہلا موقع ہو گا جب برطانیہ کا مرکزی بینک کرنسی نوٹ پر ایک مسلمان خاتون کی تصویر وضع کرے گا۔

اس خاتون کا نام نور النساء عنایت خان ہے اور وہ برطانیہ میںNora Baker کے نام سے مشہور ہے۔ یہ مملکت متحدہ میں "جنگی ہیرو" کا درجہ حاصل کرنے والی واحد مسلم خاتون ہے۔ نور کے والدین کا تعلق ہندوستان سے تھا۔ وہ 1914ء میں ماسکو میں پیدا ہوئی۔ دوسری جنگ عظیم کے دوران نازی جرمنوں کے ہاتھوں گرفتار ہونے کے بعد نور کو Dachau کے عسکری کیمپ میں گولیاں مار کر موت کی نیند سلا دیا گیا۔ اس کا سبب جرمنوں کے سامنے آنے والا یہ انکشاف تھا کہ نور نے دوسری جنگ عظیم کے دوران فرانس میں رہتے ہوئے برطانوی افواج کے لیے جاسوسی انجام دی تھی۔ اس وقت جرمنی نے فرانسیسی دارالحکومت پیرس کو قبضے میں لے رکھا تھا۔ جرمنوں نے نور کو میونخ شہر کے نزدیک Dachau کیمپ پہنچا دیا۔ نور نے کیمپ میں دوران تحقیق سخت ترین اذیت اور تشدد کو برداشت کیا مگر برطانوی فوج کی خصوصی کارروائیوں کے حوالے سے اپنی زبان کو نہیں کھولا۔ نور النساء کو 1914ء میں برطانیہ کی حکومت نے ملک کے سب سے بڑے شہری اعزاز George Cross سے نوازا۔

نور کے شان دار کارنامے کے سبب بینک آف انگلینڈ کی جانب سے شخصیات کے انتخاب میں معاونت پر مامور مؤرخين نے پچاس پاؤنڈ کے کرنسی نوٹ پر نور کی تصویر وضع کرنے کی تجویز پیش کی۔ مذکورہ کرنسی نوٹ پر اس وقت برطانیہ کی ملکہ الزبتھ دوم کی تصویر موجود ہے۔

دو سال بعد متعارف ہونے والے نوٹ پر تصویر کے سلسلے میں نور کے علاوہ دو مزید شخصیات کے نام تجویز کیے گئے ہیں۔ ان میں ایک جمیکا سے تعلق رکھنے والی سیاہ فام نرس Mary Seacole ہے۔ میری نے جنگ کریمیا کے دوران زخمی برطانوی فوجیوں کو ہنگامی طبی امداد فراہم کرنے کے لیے ایک فیلڈ ہسپتال بنایا تھا۔ میری 1881ء میں 76 برس کی عمر میں فوت ہو گئی تھی۔ اس کے تقریبا 90 برس بعد 1991ء میں میری کی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے اسے "آرڈر آف سول میرٹ آف جمیکا" کے اعزاز سے نوازا گیا۔ علاوہ ازیں 2004ء میں میری کو برطانیہ کی تاریخ کی سب سے عظیم سیاہ فام شخصیت کے طور پر منتخب کیا گیا۔

مذکورہ دونوں خواتین کے ساتھ مقابلے میں تیسری شخصیتClement Attlee کی ہے۔ وہ 1945ء سے 1951ء کے درمیان برطانیہ کے وزیراعظم رہے۔ ایٹلی نے 1967ء میں 84 برس کی عمر میں وفات پائی۔