.

جنادریہ کا میلہ: شاہ سلمان کے ہاتھوں انڈونیشیا کے پویلین کا افتتاح

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے جمعے کی شام جنادریہ میں قومی ورثے اور ثقافت کے میلے کے سلسلے میں تبوک اور الجوف کے ونگز کے علاوہ میلے کے مہمان ملک انڈونیشیا کے پویلین کا بھی افتتاح کیا۔

شاہ سلمان نے 6500 مربع میٹر پر قائم کیے جانے والے "تبوک ہیریٹیج ولیج" کا دورہ کیا اور وہاں کی سرگرمیوں اور اشیاء کے متعلق معلومات کی آگاہی حاصل کی۔ تبوک ولیج میں تبوک کی جغرافیائی اور تاریخی اہمیت کو نمایاں طور پر اجاگر کیا گیا ہے۔

سعودی فرماں روا نے الجوف ولیج کی بھی سیر کی جو 8400 مربع میٹر کے رقبے پر بنایا گیا ہے۔ شاہ سلمان نے صوبے کی معروف پیداوار کے متعلق بریفنگ بھی سنی۔ ان میں زیتون، تیل اور الجوف کی مٹھائی خاص طور پر شامل ہے۔

خادم حرمین شریفین نے اس سال کے لیے جنادریہ میلے کے مہمان ملک انڈونیشیا کے پویلین کا بھی دورہ کیا اور یہاں رکھی گئی اشیاء اسٹالز کے بارے میں معلومات حاصل کیں۔ پویلین میں ایسی کئی تصاویر بھی سجائی گئی ہیں جو سعودی عرب اور انڈونیشا کے درمیان گہرے تعلقات کا اظہار کرتی ہیں۔ ان کے علاوہ مختلف وڈیوز بھی شامل کی گئی ہیں جن میں پرانے زمانے میں حج سیزن کے اقدامات، جبل عرفات پر انڈونیشیا کے سفارت خانے کا اپنے شہریوں کے لیے پروگرام، مرحوم سعودی فرماں روا شاہ فیصل بن عبدالعزیز کا 1970 میں انڈونیشیا کا دورہ اور اسی طرح انڈونیشی صدور کے سعودی عرب کے دوروں کی تصاویر خصوصی اہمیت کی حامل ہیں۔

انڈونیشیا کے پویلین میں روایتی ملبوسات اور برتنوں کا کارنر، عربی مخطوطات کا کارنر، روایتی مقامی دست کاری کے نمونوں کا کارنر اور پرانے طرز کے گھروں کا ماڈل شامل ہے جس میں پرانے زمانے میں خزانے کی حفاظت کے واسطے ایک صندوق بھی موجود ہوتا تھا۔