.

جب انڈونیشی بینڈ کو فن کے مظاہرے کے دوران میں سونامی نے آلیا: ویڈیو

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

انڈونیشیا میں ہفتے کی شب سونامی طوفان کے بعد ایک ڈرامائی ویڈیو آن لائن پوسٹ کی گئی ہے۔اس میں سونامی طوفان کے کے نتیجے خطرناک سمندری لہروں نے اوپن ائیر کنسرٹ میں فن کا مظاہرہ کرنے والے بینڈ 17 کے ارکان کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے اور وہ اسٹیج سے ہوکر حاضرین تک پہنچ رہی ہیں۔

اس بینڈ کے ایک گلوکار رفیعیان فجر سیاح نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر واقعے کے بعد یہ جذباتی ویڈیو پوسٹ کی ہے اور یہ اطلاع دی ہے کہ ان کے گروپ کے روڈ مینجر سمیت دو ارکان ہلاک ہوگئے ہیں اور چار ابھی تک لاپتا ہیں۔

بینڈ ہفتے کی شب انڈونیشیا کے جزیرے جاوا میں واقع تان جنگ لی سنگ بیچ ریزارٹ میں ایک کھلے خیمے میں حاضرین کی بڑی تعداد کے سامنے اپنے فن کا مظاہرہ کررہا تھا۔اس دوران میں سونامی طوفان کے نتیجے میں اٹھنے والی سمندری لہروں نے اسٹیج کی جانب سے فن کاروں اور حاضرین کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

ویڈیو میں سمندری لہر کے ٹکرانے سے قبل شائقین کو فن کاروں کو داد دیتے اور تالیاں بجاتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔طوفانی سمندری لہروں کے ٹکرانے کے بعد بینڈ کے ارکان اپنے آلات سمیت سامنے ڈانس کرنے والے مردوخواتین کے اوپر جا گرے تھے۔اس کے فوری بعد ویڈیو اچانک رُک جاتی ہے۔

انسٹاگرام پر پوسٹ کی گئی ایک الگ ویڈیو میں فجر سیاح روتے ہوئے بتا رہے ہیں کہ ان کے بینڈ کے چار ارکان ابھی تک لاپتا ہیں۔ان میں ایک ان کی اہلیہ ہے۔ انھوں نے اپنے چاہنے والوں سے اپیل کی ہے کہ وہ ان کی اہلیہ دیلان صحارا کے جلد ملنے کی دعا کریں۔

انھوں نے بتایا ہے کہ بینڈ کے باقی ارکان کی زندگیاں بچ گئی ہیں ۔البتہ انھیں زخم آئے ہیں اور بعض کی ہڈیاں ٹوٹ گئی ہیں۔ان کے بینڈ 17 نے قبل ازیں اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر پوسٹ کی گئی ایک ویڈیو میں یہ اطلاع دی تھی کہ وہ جاوا میں واقع تان جنگ لی سنگ بیچ ریزارٹ میں 21 سے 23 دسمبر تک اپنے فن کا مظاہرہ کرے گا۔