.

سعودی عرب کی پہلی پاپ گلوکارہ بسمہ العتیبی سے ملئے!

امریکی موسیقی انگریزی زبان سمجھنے اور موسیقی سے لگائو کا ذریعہ بنی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب سے تعلق رکھنے والی اٹھارہ سالہ دوشیزہ نے امریکا میں شو بزنس کی دنیا میں اپنے فن کے جوہر دکھاتے ہوئے عالمی شہرت حاصل کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق بسمہ العتیبی سعودی عرب کی پہلی پاپ سنگر ہیں۔ بسمہ نے حال ہی میں اس نے امریکی ریاست لاس اینجلس میں نوجوان پاپ گلوکارہ کے گروپ کے ایک مقابلے میں پہلی پوزیشن حاصل کرکے اپنی فن کارانہ صلاحیتوں کا لوہا منوا لیا۔

بسمہ 12 سال کی عمر میں اپنے خاندان کے ہمراہ امریکا چلی گئیں۔ اس کے آبائو اجداد سعودی عرب کے شہر جدہ میں مقیم ہیں۔ امریکا میں ایک فلم فیسٹول میں ہونے والے مقابلے میں سعودی دوشیزہ نے پہلی بار حصہ لیا۔

بسمہ العتیبی نے 'العربیہ ڈاٹ نیٹ' سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جب میں سعودی عرب سے امریکا آئی تو میں انگریزی بھی نہیں بول سکتی تھی۔ میں نے انگریزی زبان سیکھنے کے لیے انگریزی نغمے اور گانے سننے شروع کیے۔ اس طرح میں نہ صرف انگریزی زبان بولنے کی ماہر ہو گئی بلکہ امریکی اور انگلش موسیقی کے ساتھ بھی میرا خاص شغف ہو گیا۔ مجھے امریکی پاپ موسیقی سے عشق کی حد تک محبت ہو گئی۔ میں انگریزی گانے سن کر انہیں لکھتی اور اس کے بعد انہیں انگریزی دھن میں گانے کی کوشش کرتی۔ میں نے اپنا 'فوڈو' کے نام سے اپنا موسیقی البم تیار کیا اور اسے مختلف موسیقی میلوں میں پیش کیا جاتا رہا۔

بسمہ نے مزید کہا کہ سنہ 2018ء کے دوران میں نے گانوں کو لکھنے کا سلسلہ بند کر دیا اور ایک صوتی انجینئر کی مدد سے گانا شروع کردیا۔ آج میں اپنے ایک نئے'Fear' یعنی خوف کے عنوان سے ایک نیا البم تیار کیا۔ یہ البم اس وقت مارکیٹ دکانوں پر برائے فروخت موجود ہے۔

بسمہ العتیبی کا کہنا تھا کہ میں خود کو ایک مکمل فنکارہ بنانا چاہتی ہوں۔ اس نے انگریزی میں گانے اور افسانے لکھنے شروع کر دیے ہیں۔ موسیقی اور اداکاری سے اسے عشق ہے اور اپنے فارغ وقت کو ضائع کرنے کے بجائے گانے لکھنے اور انہیں گانے میں مصروف رہتی ہے۔ سنہ 2018ء کے دوران اسے ’’عرب ٹیلینٹ کوئین‘‘ کے مقابلے میں شامل 100 نوجوانوں میں شامل کیا گیا تھا۔

سعودی نژاد مغنیہ نے حال ہی میں انٹرمیڈیٹ کا تعلیمی مرحلہ مکمل کیا ہے۔ اب وہ ڈرامہ اور موسیقی انسٹیٹیوٹ میں اپنی رجسٹریشن کی کوشش کر رہی ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ میرا تعلق سعودی عرب سے ہے اور میں سعودی شہری ہونے پر فخر کرتی ہوں۔ عتیبہ میری جائے پیدائش ہے اور مجھے اس کے ساتھ بھی محبت ہے۔ میری ماں شمالی سعودی عرب سے تعلق رکھتی ہیں۔ فن کی دنیا میں قدم رکھنے کے بعد میرے خاندان نے میری ہرممکن مدد کی اور میرے راستے میں کوئی رکاوٹ نہیں‌ ڈالی۔

بسمہ اب تک موسیقی کے 4 مقابلوں میں حصہ لے کر چاروں یں کامیاب ہو چکی ہیں۔ پہلا مقابلہ لاس اینجلس میں 'فوڈو فیسٹول' ہے۔ دوسرا ٹیکساس میں ٹیلنٹ مقابلہ تھا جس میں اس نے دوسری پوزیشن حاصل کی۔