.

نصف صدی سے کتابیں اور جریدے جمع کرنے والا سعودی شہری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے مشرق میں واقع ضلع الاحساء کے گاؤں القارہ سے تعلق رکھنے والے محمد الجلواح اپنا ذاتی کتب خانہ رکھتے ہیں۔ انہوں نے گزشتہ پچاس برسوں کے دوران کتب خانے کے شیلفوں اور الماریوں کو کتابوں اور جریدوں سے بھر دیا۔ اس وقت الجلواح کے کتب خانے میں پانچ ہزار سے زیادہ کتابیں، جریدے اور مخطوطے موجود ہیں۔ ان کے علاوہ نادر نوعیت کا تحریری مواد بھی موجود ہے جو انہوں نے مطالعے سے اپنی محبت کے سبب جمع کیا۔

بہت سے لوگ الجلواح کے کتب خانے کو تحقیق اور علم و معرفت کا ذریعہ دیکھنا چاہتے ہیں۔ اس کتب خانے میں تاریخ، جغرافیا، سائنس اور ادب سے متعلق موضوعات پر کتابیں پائی جاتی ہیں۔



الجلواح نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ انہوں نے جب عربی جریدوں کے شماروں کو جمع کرنے کا آغاز کیا تو اس وقت وہ پانچویں جماعت کے طالب علم تھے۔ اس وقت سے الجلواح مطالعے کی محبت دل میں بسائے کتب بینی کے شوق سے سرشار ہیں۔ کتب خانے میں ہزاروں کتابوں کے جمع ہو جانے پر الجلواح نے ان کی نمبر شماری کر کے شیلفوں کی زینت بنایا۔ اس طرح یہ کتب خانہ ایک میوزیم کی سی شکل اختیار کر گیا۔



الجلواح کہتے ہیں کہ کتاب کی اہمیت کے یقین نے ان کو یہ ذاتی کتب خانہ بنانے پر مجبور کر دیا۔ وہ پانچ دہائیوں تک کتابیں اور جرائد جمع کرنے میں لگے رہے اور ابھی اس میں اضافے کے خواہش مند ہیں۔ الجلواح کے نزدیک ڈیجیٹل دور اور ٹیکنالوجی مطالعے کے عاشقوں کے دل سے کتب بینی کو ختم نہیں کر سکتی۔


پانچ دہائیاں گزر جانے کے بعد محمد الجلواح آج بھی اپنے اس شوق پر کاربند ہیں جس کو وہ اپنا عشق اور فخر قرار دیتے ہیں۔