ماہ صیام میں مصریوں کی افطار پرمرٍغوب غذائیں‌ اور دلچسپ عادات!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

مصرمیں ماہ صیام کے ساتھ ہی رمضان المبارک سے وابستہ عادات اور معمولات بھی تازہ ہو جاتے ہیں۔ عبادات کے ساتھ ساتھ سحری و افطاری کے اوقات میں مصری شہریوں کے کھابوں میں بھی تبدیلی دیکھی جاتی ہے۔ یہ سلسلہ نسل در نسل جاری ہے۔

مصری چاہے ملک کے اندر ہوں یا پردیس میں ہوں وہ افطار کے وقت خاندان کی شکل میں جمع ہو کر ایک ساتھ افطار کرتے ہیں۔ مصر کی ہر گونری کے لوگوں کے افطار ڈنر میں شامل اشیاء مختلف ہوتی ہیں۔

ڈلٹا اور اس کے ملحقہ گورنریوں میں اندر سے بھرے ہوئے جانور مرکزی ڈیش سمجھی جاتی ہے۔ اس کے علاوہ سویٹس، گل خیرو، مشروبات میں جوس اور بھارتی کھجوریں زیادہ پسند کی جاتی ہیں۔ الصعید میں چاول اور گوشت مرکزی افطار ڈیش سمجھی جاتی ہے جب کہ ساحلی علاقوں میں 'مچھلی' کی رمضان کے ایام میں شوق سے افطاری میں کھایا جاتا ہے۔

اقصائے صعید مصر کے باشندے افطاری کے وقت گھروں سے نکل کر راہ گیروں کے ساتھ افطاری کو افضل سمجھتے ہیں۔ گھروں سے باہر اجتماعی افطاری وہاں معمول ہے۔ وہاں کے روزہ دار ماہ صیام کے لیے خصوصی مشروبات تیار کرتے ہیں۔ گندم کے شیرے، خمیرہ، پانی اور لیموں سے تازہ افطار مشروب بنائے جاتے ہیں۔

قاہرہ میں امریکن یونیورسٹی سے منسلک سوشل سائنسز کے استاد ڈاکٹر سعید صادق نے "العربیہ ڈاٹ نیٹ" سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مصری شہریوں کی ماہ صیام کی مناسبت سے مخصوص عادات ہیں۔ ان عادات میں افطاری میں پورے خاندان کا ایک دسترخوان پر جمع ہونا، گھروں کی سجاوٹ، سڑکوں کو چراغٍاں کرنا، نماز تراویح اور دیگر نمازوں کی با جماعت ادائی کی پابندی جیسی خوبصورت عادات ماہ صیام سے منسلک ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ ماہ صیام میں مصریوں‌کی خوبصورت عادات میں 'رحمان دسترخوان' ہے جو پورے ماہ بلا تعطل لگتا ہے اور اس میں ہرایک حسب توفیق افطاری کاسامان لے کر آتا ہے۔ ایسے دسترخوان سڑکوں اور پبلک مقامات پر لگائے جاتے ہیں۔ یہ رمضان دسترخوان فاطمی خلیفہ العزیز باللہ کے دور سے چلے آرہے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں