شمالی سعودی عرب کے 'جبال حسمیٰ' کا حسن وجمال!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں قدرتی مقامات کے ایک دلدادہ شہری نے شمالی علاقے تبوک کے پہاڑی علاقے کے دورے کے دوران ان پہاڑوں کے قدرتی حسن کو اپنے کیمرے کی آنکھ میں محفوظ کر کے ان کی خوبصورتی اور قدرت کی صناعی کو پوری دنیا تک پہنچا دیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے بھی فوٹو گرافر فواز الحربی کے کیمرے میں محفوظ تصاویر شائع کی ہیں۔ 'نیوم' سٹی کے علاقے میں واقع وادی حسمیٰ کے پہاڑوں کی خوبصورتی کا جادو سر چڑھ کر بولتا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے فواز الحربی نے کہا کہ حسمیٰ پہاڑوں کی خوبصورتی بے مثال اور مناظر جادوئی حسن ہر ایک کو اپنی طرف کھینچے ہوئے ہے۔ بھورے رنگ کے ان پہاڑوں کے بیچ سرسبز و شاداب جنگلات بالخصوص جنگلی انجیر اور خوشبودار جڑی بوٹیاں ان پہاڑوں کی خوبصورتی اور دل آویزی کو چار چاند لگا دیتی ہیں۔

وادی تبوک 80 کلو میٹر کے علاقے پر پھیلی ہوئی ہے۔ اس وادی میں کہیں اونچے پہاڑ اور میں گہرے مٹیالے رنگ کے ٹیلے، کہیں جنگلات اور کہیں تنگ وادیاں کتاب کے اورک کی طرف ایک دوسرے کے ساتھ جڑی ہوئی ہیں۔ ان پہاڑوں میں کہیں سرمئی رنگ اور کچھ سیاہ پتھر بھی موجود ہیں۔ حسمیٰ پہاڑی علاقےکی خوبصورتی کا ایک پہلو اس کی غاریں بھی ہیں۔ طلوع آفتاب اور غروب آٍفتاب کے اوقات میں ان پہاڑوں کا حسن اور بھی دیدنی ہوجاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں