.

پاکستانی اوردیگرمعتمرین اپنے ممالک میں بائیومیٹرک تصدیق کرائیں: سعودی وزارتِ حج وعمرہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی وزارت حج وعمرہ نے ہدایت کی ہے پاکستانیوں کو حج اور عمرہ ویزا حاصل کرنے کے بعد ضروری بائیو میٹرک تصدیق اپنے ملک میں ہی کرانا چاہیے تاکہ سعودی عرب پہنچنے کے بعد ہوائی اڈوں ان کے وقت کا ضیاع نہ ہو۔

انگریزی اخبار’’ڈان‘‘ کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کی وزارت حج وعمرہ نے پاکستان سمیت بائیو میٹرک اندراج کرانے والے دیگر ممالک کو سرکلر جاری کرتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ ’’ان ممالک کے زائرین کو روانگی سے قبل ہی خود کو رجسٹر کرا لینا چاہیے۔‘‘ سرکلر کے مطابق ’’سعودی عرب آمد سے قبل بائیو میٹرک تصدیق کرانا ضروری ہے تاکہ وقت بچایا جا سکے اور سعودی عرب میں داخل ہونے میں آسانی ہو سکے۔‘‘

اس حوالے سے سعودی وزارت کا کہنا ہے کہ حال ہی میں مملکت میں آنے والے کئی ہزار زائرین کو داخلہ منسوخ کر کے ایئرپورٹ سے ہی واپس بھیج دیا گیا تھا۔انھوں نے ویزے کا صحیح طریق کار نہیں اپنایا گیا تھا۔اس طرح کی صورتحال سے بچنے کے لیے زائرین ملک کے حج اور عمرہ کمیٹی سے رجسٹرڈ ٹریول ایجنٹس کے ذریعے صحیح ویزا کیٹیگری کے لیے درخواست دیں۔

سعودی حکام کے مطابق جن افراد کے پاس نئے متعارف کیے گئے ای ویزا ہیں وہ حج اور عمرہ کے لیے سعودی عرب میں داخلے کے لیے اس زمرے کو استعمال نہیں کرسکتے۔ وزارت کا کہنا تھا کہ وزٹ ویزا میں سیاحوں کو کنسرٹس اور کھیلوں کی تقریبات میں شرکت کی اجازت ہوگی جبکہ ساتھ ہی خبردار کیا جائے گا کہ صحیح ویزا اور دستاویزات کے بغیر زائرین کو جرمانہ یا ملک بدری کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

درایں اثنا سعودی سفارت خانے کی جانب سے جاری بیان میں واضح کیا گیا ہے کہ زائرین سمیت سعودی عرب جانے والوں کو حج اور عمرے سے قبل بائیو میٹرک کرانے سے فائدہ ہوگا کیونکہ بائیومیٹرک سعودی عرب میں داخلے کے لیے ضروری ہے، لہٰذا زائرین صرف اس وقت سفر کریں جب ویزا کی تمام کارروائیاں مکمل ہو جائیں۔ سفارت خانے کا کہنا تھا کہ ایک مرتبہ بائیو میٹرک تصدیق ہو جائے تو معتمرین کو صرف کسٹم کے مرحلے سے گزرنا اور امیگریشن عملہ سے پاسپورٹ پر مہر لگوانا ضروری ہوگا۔