.

بدشگونی کی علامت سمجھا جانے والا پرندہ خطرناک افراد کا انکشاف کرتا ہے!

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سائنس دانوں کی جانب سے اس بات کا اعلان کیا گیا ہے کہ Jackdaw کوّا جسے اس کی آواز سمیت سیکڑوں بلکہ غالبا ہزاروں برس سے بدشگونی کی علامت سمجھا جاتا ہے ، یہ پرندہ بری اور خطرناک شخصیت کے حامل افراد کا انکشاف کر سکتا ہے۔

برطانیہ کی Exeter یونیورسٹی کے محققین کے مطابق جیک ڈا نہایت سماجی اور انتہائی ذہین پرندہ ہے ... اور وہ افراد کو یاد رکھنے کی صلاحیت رکھتا ہے اگرچہ یہ لوگ اس کے بعد طویل عرصے تک اس پرندے کو نظر نہ آئیں۔

برطانوی اخبار "انڈیپنڈنٹ" میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق محقق سائنس دانوں نے یہ انکشاف کیا ہے کہ کوئی بھی انجان شخص جیک ڈا کے گھونسلے کے قریب آتا ہے تو اس پرندے کا رد عمل سامنے آتا ہے۔ تاہم زیادہ دل چسپ بات یہ ہے کہ اس پرندے کا رد عمل اس وقت نظر میں آیا جب محققین نے خطرات کی آوازوں پر مشتمل آڈیو ریکارڈنگ چلائی۔ بعد ازاں جب انسانی بات چیت پر مشتمل ریکارڈنگ چلائی گئی (جس میں کوئی خطرے کی آواز نہیں تھی) تو جیک ڈا کا رد عمل مختلف رہا۔

اس کے بعد جب سائنس دانوں نے اس شخص کو بلایا جو خطرات کی آواز کی ریکارڈنگ کے ساتھ جیک ڈا کی ذہن میں محفوظ ہو گیا تھا ،،، تو یہ پرندہ کم از کم دو مرتبہ تیزی کے ساتھ اپنے گھونسلے میں واپس آ گیا۔ گویا کہ وہ گھونسلے میں موجود دیگر پرندوں کو بھی اس امر سے خبردار کرنے کی کوشش کر رہا ہو۔

البتہ جیک ڈا نے جس شخص کی صورت کے ساتھ عام بات چیت سنی تھی ،،، اُس کے دوبارہ دیکھے جانے پر اس پرندے کا رد عمل پہلی والی حالت جیسا نہ تھا۔

سائنس دانوں کے نزدیک جیک ڈا کوّے کو لوگوں کی باتیں سننے اور ان کے برتاؤ کی خبر لینے کے عمل میں استعمال کیا جا سکتا ہے کہ آیا ان افراد کی بات چیت مثبت ہے یا منفی اور آیا کہ یہ لوگ شرپسند ہیں یا نہیں !