.

معذور باپ کی بیٹی کو وہیل چیئر پراسکول لے جانےکی دل موہ لینے والی تصویر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے علاقے الاحساء نواحے گائوں التھیمیہ سے تعلق رکھنے والے ایک 70 سالہ معذور شخص کا اپنی بیٹی کو وہیل چیئرپر خود اسکول چھوڑںے کے منظر نے لوگوں کے دل موہ لیے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سوشل میڈیا کی توجہ کا مرکز بننے والا محمد العباد کچھ عرصہ قبل ایک المناک ٹریفک حادثے سے اپنی ٹانگوں سے معذور ہوگیا تھا۔ وہ روزانہ اپنی بیٹی کو خود اسکول چھوڑنے کے لیے اسے اپنی وہیل چیئر پرساتھ بٹھاتا اور اسکول سے چھٹی ہونے پر اسے واپس گھر لے کرآتا ہے۔

سوشل میڈیا پروائرل ہونے والی اس تصویر کوبڑے پیمانے پر سراہا گیا ہے۔ صارفین کا کہنا ہے کہ ایک معذور باپ کا اپنی بیٹی کو وہیل چیئرچلا کر اسکول تک پہنچانا اور واپس لانا شفقت پدری کی عمدہ مثال ہے۔

محمد العباد کی تصویر فوٹو جرنلسٹ فہد الملحم نے لی۔ اس نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ میں الاحساء بلدیاتی کونسل کے دیگر ارکان کے ہم راہ شیبانی پارک کے دورے پرتھا تاکہ وہاں پرموجود معذور افراد کے حالات معلوم کیے جاسکیں۔

اس کا کہنا ہے کہ جب میں نے وہیل چیئر ایک بزرگ کو اپنی بچی کو ساتھ لیے اسکول سے واپس آتے دیکھا تو اس منظر اور کیفیت نے مجھے بہت متاثر کیا اور میرے پاس اس کے بیان کے لیے الفاظ نہیں تھے۔

الملحم نے کہا کہ میں یہ منظر دیکھ کر رک گیا۔ یہ منظر بلا شبہ لا متناہی محبت،یکجہتی، تعاون اور خاندانی رشتوں میں الفت کے ہزار ہا معانی سے بھرپور تھا اور یہ الاحساء کے لوگوں کا خاصہ تصورکیا جاتا ہے۔

الملحم نے محمد العباد سے بات چیت کی اور اس کی اجازت سے اس کی تصویر بھی لی۔