.

سعودی عرب کے ساحل کا قدرتی حسن جو دیکھنے والوں پر سحر طاری کردے: تصاویر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے شہر تبوک کے جنوب میں 325 کلو میٹر کی مسافت پر الوجہ گورنری میں بحر احمر کا ساحل ایک ایسا خوبصورت مقام ہے جسے کم ہی آنکھوں نے دیکھا ہوگا۔ یہ مقام اپنے حیرت انگیزقدرتی حسن کی بہ دولت دیکھنے والوں پرسحر طاری کر دیتا ہے۔ ساحل سمندر کے ساتھ جڑی جھیل سیاحوں کے لیے غیر معمولی کشش رکھتی ہے۔

"العربیہ ڈاٹ نیٹ" نے سعودی عرب کے شمال مغرب میں واقع اس طلمساتی اور خوبصورت مقام کی تصاویر شائع کی ہیں۔ الزاویہ کے شمال میں 45 کلو میٹر کی مسافت پر "النخیرہ" کے گاؤں کے قریب العربیہ ڈاٹ نیٹ کی ٹیم نے فوٹو گرافر محمد شریف سے ملاقات کی۔

اُنہوں نے اس جگہ کو قدرتی تیراکی کا تالاب قرار دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ سمندر کی لہریں ایک طرف سے ایک تنگ راہداری کے راستے اس میں داخل ہوتی ہیں۔ یہاں پر سکائی ڈائیونگ ، تیراکی اور ماہی گیری میں دلچسپی رکھنے والے افراد اور سیاحوں کی بڑی تعداد کو دیکھا جاتا ہے۔

الشریف نے کہا کہ وہ جزیروں کے رنگوں اور سمندر کے نیلے رنگ کی خوبصورتی میں گہری دلچسپی رکھتے ہیں۔ سعودی عرب کے شمال مغرب کا یہ ساحل سمندر اپنی کشش کی بہ دولت اپنی مثال آپ ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ ساحل سمندر کی خوبصورتی کو دستاویزی شکل دینے کے لیے ڈرون کا استعمال کرتے ہیں۔

الشریف نے ساحل سمندر کی طرف ایک تباہ شدہ جہاز کے ملبے کے راستے کی طرف اشارہ کیا اور بتایا کہ اس جہاز کی کہانی 70 سال پرانی ہے۔ یہ جہاز مصر سے واپسی پر فنی خرابی کے باعث خراب ہوا جس کے بعد وہیں چھوڑ دیا گیا۔