کرونا وائرس: الباحہ میں جسمانی درجہ حرارت کی جانچ کے لیے تھرمل ڈرونز کا استعمال

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب کے علاقے الباحہ میں حکام نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کی غرض سے کھلی جگہوں ، شاہراہوں، بازاروں اور مارکیٹوں میں لوگوں کے جسمانی درجہ حرارت کی پیمائش کے لیے تھرمل ڈرونز کا استعمال شروع کردیا ہے۔

سعودی پریس ایجنسی کی ایک رپورٹ کے مطابق یہ ڈرونز تھرمل کیمروں سے لیس ہیں اور مصنوعی ذہانت کی بناپر کام کررہے ہیں۔سعودی روزنامہ الریاض نے لکھاہے کہ تھرمل کیمرے ایک سیکنڈ میں 24 افراد کو مانیٹر کرسکتے ہیں۔

حکام کے مطابق اگر کسی شخص کا جسمانی درجہ حرارت زیادہ ہو تو اس کو مارکیٹ میں داخل ہونے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور اس کو فوری طور پر کسی معالج سے رجوع کرنے کا کہا جائے گا۔

سعودی عرب کے وسطی علاقے القصیم کی بلدیہ اور مدینہ منورہ میں بھی کرونا وائرس کا شکار افراد کا سراغ لگانے کے لیے اسی قسم کی ڈرون ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جارہا ہے۔

کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے اور اس کی علامات کے حامل افراد کی تشخیص کے لیے ڈرونز کا استعمال سعودی عرب کی وسیع تر حکمتِ عملی کا حصہ ہے۔

سعودی عرب کی وزارت صحت نے سوموار کو کرونا وائرس کا شکار چھے افراد کی موت اور 472 نئے کیسوں کی تصدیق کی ہے جس کے بعد مملکت میں اس مہلک وَبا سے متاثرہ افراد کی تعداد 4934 ہوگئی ہے اور مہلوکین کی تعداد 65 ہوگئی ہے۔

سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے مملکت میں کرونا وائرس سے متاثرہ تمام افراد کے بلا تفریق علاج کا حکم دیا ہے۔ ان میں سعودی شہری ، غیرملکی تارکین وطن اور ویزوں کی مدت ختم ہونے کے باوجود مملکت میں مقیم غیرملکی افراد بھی شامل ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں