.

لبنانی خاتون نے سال گرہ پر 2.7 کروڑ ڈالر خرچ کر دیے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ایک لبنانی خاتون نے جسے ارب پتی قرار دیا گیا ہے چند روز قبل اپنی 40 ویں سال گرہ مناتے ہوئے خطیر رقم خرچ کر ڈالی۔ کسی بھی میڈیا نے خاتون کا نام ذکر نہیں کیا۔ خاتون نے سال گرہ کی تقریب ہسپانیہ کے جنوب میں مالاگا ریجن کے تفریحی صحت افزا مقام میجاس پر واقع اپنے محل میں منعقد کی۔

تقریب کے موقع پر مذکورہ خاتون نے جو لباس زیب تن کیا صرف اس پر 2.5 کروڑ ڈالر کی لاگت آئی۔ لباس پر مختلف قسم کے ہیرے اور جوہرات جڑے گئے تھے۔ تقریب میں خاتون کے خاندان اور قریبی دوستوں سمیت 10 افراد شامل تھے۔ یہ تقریب بیک وقت دنیا بھر میں کئی ممالک میں منعقد ہوئی۔ اس میں 3 مقامات دبئی میں اور 2 ، 2 مقامات لندن ، لاس اینجلس ، ہانگ کانگ، کویت اور دوحہ میں جب کہ ایک ، ایک مقام پیرس، ٹوکیو اور ماسکو میں تھا۔ اس طرح مجموعی طور پر تقریب میں 150 افراد نے اپنی موجودگی کو یقینی بنایا۔ ان تمام افراد کو لبنانی خاتون کی طرف سے قیمتی تحائف دیے گئے جب کہ ہر ذیلی مقام پر منعقد تقریب کے لیے خاتون نے 20 ہزار ڈالر کی ادائیگی کی۔

اس خبر کو برطانیہ کے ڈیلی میل اخبار کے علاوہ برازیل اور ہسپانیہ کے میڈیا نے بھی نشر کیا۔

ذیلی تقریبات میں شرکت کرنے والے ہر فرد کو لبنانی خاتون کی جانب سے 5 ہزار ڈالر مالیت کے تحائف پر مشتمل پیکج سے نوازا گیا۔ پیکج میں 1600 ڈالر کی بیش قیمت پینسلیں، 600 ڈالر کے مشروبات کے علاوہ 650 ڈالر قیمت کی جینز کی پینٹس کا جوڑا، چہرے کے لیے ایک ماسک، سونے کا پانی چڑھا چمڑے کا بٹوہ جس کی قیمت 85 پاؤنڈ اسٹرلنگ، Caviar کا ایک پیکٹ اور چہرے اور جلد کے استعمال کے لیے کریمیں شامل تھیں۔

اس تقریب کی جان وہ میکسی تھی جو برطانوی ڈیزائنر Debbie Wingham نے لبنانی خاتون کے لیے تیار کی تھی۔ مشرق وسطی میں استعمال کیے جانے والے لباس کی طرز پر تیار اس میکسی میں 36 بڑے اور تقریبا 4000 چھوٹے ہیرے جڑے گئے تھے۔ اس کے علاوہ لباس کو صاف اور شفاف موتیوں سے بھی مرصع کیا گیا تھا۔ البتہ حیرت انگیز امر یہ ہے کہ ذیلی تقریب میں لبنانی خاتون کے ملک کے دارالحکومت بیروت کا کوئی حصہ نہ تھا۔