.

سعودی عرب: دیہات میں ایک خاتون کی 'دیہاتی مہمان سرائے' سیاحوں کی توجہ کا مرکز بن گئی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے علاقے جازان میں الدائر گورنری کے پہاڑے ماحول سے فائدہ اٹھاتے ہوئے اپنے گھر کو ایک 'دیہاتی مہمان سرائے' میں‌ تبدیل کر کے مقامی شہریوں سیاحوں کی توجہ حاصل کی ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے 'دیہاتی مہمان سرائے' کی میزبانی سارہ المالکی نے بتایا کہ پہاڑی اور دیہاتی طرز کے اس مہمان خانے کا تصور اس کے ذہن میں چند ماہ پہلے پیدا ہوا۔ اس نے گائوں میں ایک زرعی فارم قریب واقع اپنے گھر کو ایک دیہاتی طرز کے مہمان سرائے میں تبدیل کرنے کے لیے کام شروع کر دیا۔ اس کا کہنا ہے فی الحال وہ اپنے اس منصوبے کو مکمل کرنے کے لیے کام کر رہی ہے۔

انہوں نے یہ بھی مزید کہا کہ گاؤں اور فارم ہائوس کے قریب الدائر گورنری میں اپنی نوعیت کا پہلا منصوبہ ہے جس کا مقصد عام طور پر مقامی شہریوں اور باہر سے آنے والے سیاحوں کو دیہاتی ماحول کے مطابق رہائش، خوراک اور دیہی ماحول سے لطف اندوز ہونے کے لیے ماحول فراہم کرنا ہے۔

اس نے مزید کہا کہ پروجیکٹ عام طور پر خطے میں بکھرے ہوئے سیاحوں کی جگہوں اور خاص طور پر الدائر گورنری میں کے سیاحوں کی آمد و رفت کے لیے ایک نیا ماحول پیدا ہرنا ہے اور انہیں خالص دیہاتی طرز زندگی سے آگاہ کرنا ہے۔

سارہ نے بتایا کہ اب تک اس نے اس مہمان سرائے کے آس پاس مختلف قسم کے درختوں کے 1500 پودے لگائے ہیں۔ جن میں آم، کافی، آم، کا کائو، اور پپیتا کے درخت بھی ہیں۔ اس کا کہنا تھا کہ فی الحال یہ منصوبہ ابتدائی مرحلے میں ہے تاہم قیام گاہ مکمل ہوچکی ہے۔