.

کرونا پر تحقیق: عرب دنیا میں سعودی عرب پہلے اور دنیا میں 14 ویں نمبر پر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب نے جہاں کرونا کی وبا پر قابو پانے میں کامیابی حاصل کی وہیں اس موذی وبا کی روک تھام کے لیے سائنسی اور تحقیقی میدان میں بھی پیش پیش رہا ہے۔

مملکت کی کئی جامعات اس وقت کرونا کی وبا کی روک تھام کے لیے مختلف سائنسی طریقوں پر کام کر رہی ہیں۔ چند ماہ قبل عالمی سطح پر سعودی عرب کا شمار کرونا سے متعلق سائنسی تحقیقات کے میدان میں 17 ویں نمبر پر تھا اور آج اس میدان میں مزید آگے بڑھ کر سعودی عرب عالمی سطح‌ پر 14 ویں نمبر پرآ گیا ہے۔ اس طرح سعودی عرب 'جی 20' گروپ میں کرونا سے متعلق تحقیقات کرنے والے ممالک میں 12 ویں نمبر پر ہے۔

سعودی عرب کے وزیر تعلیم ڈکٹر حمد آل الشیخ نے مملکت میں کرونا کے حوالے سے تحقیق وجستجو کے میدان میں خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کی خصوصی توجہ اور سرپرستی پران کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔

انہوں‌ نے کہا کہ سعودی عرب کی قیادت کی دانش مندانہ پالیسیوں اور اقدامات کے نتیجے میں مملکت نے کرونا وبا کو شکست دی ہے۔ سعودی عرب کی مساعی سے اندازہ ہوتا ہے کہ مملکت نے وبا کی روک تھام کے لیے قابل قدر کوششیں کی ہیں۔

ڈاکٹر حمد آل شیخ نے بتایا کہ سعودی عرب میں‌ کرونا کے حوالے سے ہونے والی تحقیقات کے 84 فی صد کے نتائج جاری کیے گئے اور اب تک مملکت کی جامعات میں کرونا کے حوالے سے کی گئی تحقیق کے 915 سائنسی اور تحقیقی مقابلے شائع کیے گئے ہیں۔